100 نوجوان مفکرین کا ریاض میں "مِسک گلوبل فورم" کا آغاز کا منصوبہ

مسک گلوبل فورم لوگوں کو روزگار دینے اور تخلیقی توانائیوں کا ایک عظیم ورثہ رکھتا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

مقامی اور بین الاقوامی رہنماؤں، اختراع کاروں اور نوجوان مفکرین کے 100 سے زائد مقررین اگلے نومبر کی نویں اور دسویں تاریخ کو "مِسک گلوبل فورم" کے آغاز کے لیے جمع ہوں گے۔

تقریب کا انعقاد محمد بن سلمان فاؤنڈیشن "مِسک" نے کنگ عبدالعزیز انٹرنیشنل کانفرنس سینٹر ریاض میں کیا ہے۔

"مِسک گلوبل فورم" کے چھٹے ایڈیشن کا کام شروع کردیا گیا ہے ۔ اس مرتبہ 100 سے زائد مقررین کی شرکت کے ساتھ 100 سیشنز منعقد کیے جائیں گے جو فورم کے مرکزی موضوع "جنریشن آف چینج" پر بات کرنے کے لیے ملاقات کریں گے۔ ان سیشنز می مستقبل کے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے نوجوانوں کو بااختیار بنانے کے مسائل پیش کیے جائیں گے۔

مسک فاؤنڈیشن کے چیف پروگرام آفیسر عمر نجار نے وضاحت کی کہ مسک گلوبل فورم نوجوانوں کو با اختیار بنانے اور ان کی تخلیقی توانائیوں کے استعمال کا ایک عظیم ورثہ رکھتا ہے۔

معاشرے اور دنیا پر اس کے اثرات کے ساتھ فورم مکالمے کی اہمیت کو بھی اجاگر کرتا ہے۔ فورم مواقع پیدا کرنے اور ایسی بامعنی اور بااثر تبدیلی جو خیالات اور مثبت تبدیلی کی حمایت کرتی ہو کے متعلق بیداری بڑھاتا ہے۔ مختلف نسلوں کے اشتراک کردہ اقدار اور اہداف کے بارے میں بیداری کی سطح کو بڑھایا جاتا ہے۔ نوجوان نسل فرد معاشرہ اور دنیا کی ترقی کے لئے ایک موثر اور حقیقی مکالمہ تیار کرتے ہیں۔

نجار نے مزید کہا کہ "نسلوں کا مکالمہ بڑی اہمیت کا حامل ہے اور یہ مکالمہ نوجوانوں کی توانائیوں کو تبدیلی کی جانب مزید مواقع پیدا کرنے کی طرف لے جاتا ہے۔ اس لیے مسک فاؤنڈیشن خیالات اور مثبت تبدیلیوں کی حمایت کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ خاص طور پر سعودی نوجوانوں میں تبدیلی کی خواہش ایک اہم معاون ہے۔

فورم ان نوجوانوں کو متاثر کن قومی اور عالمی مواقع میں شرکت کا موقع دیتا ہے کیونکہ یہ فورم بااثر شخصیات کو نوجوانوں سے ملاقات کرنے کی اجازت دیتا ہے۔ ان ملاقاتوں کا مقصد شرکاء کے درمیان رابطے، تعلقات اور تعامل کے پل تعمیر کرنا اور نسلوں کے درمیان مکالمے کو فروغ دینا ہے۔

10 سال بیت گئے

اس سال مسک گلوبل فورم کا چھٹا ایڈیشن سب سے بڑا ہے کیونکہ یہ مسک فاؤنڈیشن کے قیام کی 10ویں سالگرہ کے موقع پر منعقد کیا جارہا ہے۔ فاؤنڈیشن نے پچھلی دہائی کے دوران ایک متحرک اور مربوط نظام تشکیل دیا جو مختلف شعبوں میں نوجوانوں کی توانائیوں اور تخلیقی صلاحیتوں کو فروغ دے رہا ہے۔ فاؤنڈیشن کی حکمت عملی کی بنیاد قائدین کی تعمیر اور پیشرفت کے خیالات کی پرورش پر ہے۔ یہ حکمت عملی موجودہ دور اور کمیونٹی سروس کی مہارتوں سے کمیونٹی کو بااختیار بنانے کے لیے کام کرتی ہے اور موجودہ اور مستقبل کے چیلنجوں کا حل تلاش کرنے میں مدد دیتی ہے۔

تاجروں کو مالا مال کرنا

یہ امر قابل ذکر ہے کہ مسک فاؤنڈیشن نے اپنے 10 سالہ سفر کے دوران نوجوانوں کا ہاتھ پکڑا، کاروباری افراد کو مالا مال کیا، مہارتوں کو فروغ دیا، قائدانہ شعور بیدار کیا اور سماجی پائیداری کو بڑھانے کی طرف سفر جاری رکھا۔ اس کی کوششوں کا اختتام ولی عہد محمد بن سلمان کے اس اعلان پر ہوا کہ جس میں غیر منافع بخش شہزادہ محمد بن سلمان سٹی قائم کرنے کا کہا گیا تھا۔

یہ دنیا کا پہلا غیر منافع بخش شہر ہے۔ عالمی سطح پر غیر منافع بخش شعبے کی ترقی کے لیے ایک متاثر کن ماڈل اور بہت سے نوجوانوں اور رضاکار گروپوں اور مقامی اور بین الاقوامی غیر منفعتی گروپوں کے لیے ایک انکیوبیٹر کی حیثیت رکھتا ہے۔ منافع بخش تنظیمیں، فاؤنڈیشن کے ملحقہ اداروں میں شامل ہوکر مستقبل کے رہنما بنانے کے اہداف کو حاصل کرنے میں تعاون کرتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں