تیل کے ہنگامی ذخائرکا استعمال’تکلیف دہ‘ ہوسکتا ہے: سعودی وزیرتوانائی کا انتباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے وزیرتوانائی شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان نے کہا ہے کہ بعض ممالک تیل کے اپنے ہنگامی ذخائر کو استعمال کر رہے ہیں اور اسے مارکیٹوں میں ہیراپھیری کرنے کے لیے ایک میکانزم کے طور پراستعمال کر رہے ہیں جبکہ اس کا مقصد تیل کی رسد میں کسی بھی کمی کو پوراکرنا ہونا چاہیے۔

انھوں نے الریاض میں منگل کے روز مستقبل سرمایہ کاری اقدام (ایف آئی آئی) کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’یہ انتباہ کرنا میرا فرض ہے کہ آنے والے مہینوں میں ہنگامی اسٹاک کا استعمال نقصان دہ اور تکلیف دہ ہوسکتا ہے‘‘۔

امریکی صدرجوبائیڈن نے گذشتہ ہفتے ایک منصوبہ کا اعلان کیا تھا کہ وہ اس سال کے آخر تک ملک کے تیل کے ہنگامی ذخائر سے تیل کو فروخت کردیں گے اوران ذخائرکو دوبارہ بھرنا شروع کردیں گے۔واضح رہےکہ وہ 8 نومبرکو وسط مدتی انتخابات سے قبل پٹرول کی قیمتوں کو کم کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں