ائرلائنزکا طیارہ کی درمیانی نشست پربیٹھنےوالوں کیلئے ہرہفتہ ڈیڑھ لاکھ ڈالر کا انعام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یقینی طور پر ہوائی جہاز میں درمیانی نشست بیٹھنے کے لیے سب سے کم مطلوب نشست ہوتی ہے۔ اس کی وجہ ہوتی ہے کہ یہ نشست کھڑکی کا نظارہ یا ہوائی جہاز کی خدمات تک آسان رسائی فراہم نہیں کرتی۔

سوشل میڈیا پر ائیر لائن ’’ورجن آسٹریلیا‘‘ نے انکشاف کیا ہے کہ ایک سروے میں 7ہزار 500 افراد نے شرکت کی اور ان کے صرف 0.6 فیصد افراد نے ہوائی جہاز پر درمیانی نشست کو ترجیح دی۔

تاہم مسافروں کو درمیانی نشست پر بیٹھنے کے لئے آمادہ کرنے کیلئے ایک ائیر لائنز نے نیا منصوبہ بنایا ہے۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ نے اس معاملہ پر توجہ کی تو معلوم ہوا ہے کہ سی این این کے مطابق یہ منصوبہ کامیاب ہوگیا تو درمیانی نشست پر لوگوں کی دلچسپی کو بڑھایا جا سکتا ہے۔

’’ورجن آسٹریلیا‘‘ نے اس منصوبے کے تحت اب درمیانی نشست کے لیے ایک "لاٹری" کا آغاز کر دیا ہے۔ اس لاٹری کے تحت رضا کارانہ طور پر یا غیر ارادی طور پر درمیانی نشست پر بیٹھنے والوں میں کسی ایک کو قرعہ اندازی کے ذریعہ سے 2 لاکھ 30 ہزار آسٹریلین ڈالرز کا انعام دیا جائے گا۔ یہ تقریبا ایک لاکھ 45 ہزار امریکی ڈالر بنتے ہیں۔

ورجن آسٹریلیا کی سی ای او جین ہرڈلیکا نے کہاکہ ہم اب اپنے فادار مہمانوں کو صرف درمیانی نشست پر بیٹھنے کے لیے 2 لاکھ 30 ہزار ڈالر کا انعام جیتنے کا موقع دے رہے ہیں۔

انعامات میں مفت پروازیں، ہیلی کاپٹر کے دورے، ریزورٹ کی چھٹیاں اور فٹ بال میچ دیکھنے کے دورے بھی شامل ہیں۔

ایئر لائن نے کہا کہ اب سے 23 اپریل 2023 تک کوئی بھی ولاسٹی فریکوینٹ فلائر ممبر جس کی عمر 18سال یا زیادہ ہو درمیانی نشست پر بیٹھے تو لاٹری میں رجسٹر ہونے کیلئے ائر لائن کی ایپ استعمال کر سکتا ہے۔

ہر ہفتے جیتنے والے کو ایک الگ انعام دیا جائے گا۔

24 اکتوبر کو ایئر لائن کے سوشل میڈیا پیجز پر اس اعلان کے پوسٹ ہونے کے بعد کچھ مبصرین نے اتفاق کیا کہ یہ ایک شاندار منصوبہ ہے۔ بعض دوسروں نے کہا کہ کوئی چیز انہیں درمیانی نشست پر نہیں بٹھا سکتی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں