سب سے بڑے پولش جوہری توانائی منصوبے کا ٹھیکہ امریکی کمپنی کو ملنے کا امکان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکہ کی ویسٹنگ ہاوس الیکٹرک کمپنی پولینڈ کے پہلے جوہری پاور پلانٹ کی تعمیر کا ٹھیکہ جیتنے میں کامیابی حاصل کر سکتی ہے۔ جبکہ کوریا ہائیڈرو نیوکلئیر پاور بھی اس جوہری پلانٹ کی منصوبہ بندی اور کا حصہ بن سکتی ہے۔

یہ بات پولینڈ کے نائب وزیر اعظم نے بدھ کے روز بتائی ہے۔ نائب وزیر اعظم کے مطابق پولینڈ ،9 گیگا واٹ کی صلاحیت کے مجوزہ پاور پالنٹ کے لیے 49 فیصد تک ایکویٹی کے حصول کےلیے کوشاں ہے۔

یہ جوہری پاور پلانٹ لگا کر وارسا کارب کے اخراج میں کمی کرنا چاہتا ہے اور بتدریج کوئلے کے ذریعے توانائی کا حصول روکنا چاہتا ہے۔ نائب وزیر اعظم جیسک ساسین نے کہا ' اس سلسلے میں ابھی کوئی حتمی فیصلہ نہیں ہوا تاہم کافی اشارے ہیں کہ امریکی کمپنی ویسٹنگ ہاوس ہی اس منصوبے کا ٹھیکہ جیت سکے گی۔'

انہوں نے بتایا یہ جوہری پاور پلانٹ تین ری ایکٹرز پر مشتمل ہو گا۔ امریکی ویسٹنگ ہاوس کمپنی اس کے لیے ڈیل کے لیے جنوبی کورین کمپنی کا مقابلہ کر رہی ہے، جنوبی کوریا کی اس سرکاری کمپنی نے اپریل میں اپنی پیش کش جمع کرائی تھی۔' ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا اس منصوبے کے لیے 'وارسا فرانسیسی کمپنیوں کے ساتھ بھی مکالمہ کر رہا ہے۔ '

دوسری جانب مقامی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے ' پولینڈ کی موسمیات سے متعلق وزارت نے امریکی سفیر کے ساتھ پچھلے ماہ ایک ملاقات کی ہے اور اس منصوبے میں امریکی تعاون کے امور پر بات چیت کی ہے۔

نیز پولینڈ کی سب سے بڑی یوٹیلٹی جو ریاستی کنٹرول میں کام کرنے والی ' پی جی ای ' ہے یوٹیلٹی زی پاک اور اربوں ڈالر کی مالیت کی حامل زگمنٹ سولورز کورین کمپنی سے مل کر ایک معاہدے پر دستخط کرنے کے قریب پہنچ چکی ہیں۔ '

نائب وزیر اعظم جیسک ساسین کے مطابق ' یہ ممکن ہے کہ جلد ایک سرکاری منصوبے کے ساتھ نجی شعبے کا ایک متوازی منصوبہ بھی شروع ہو جائے گا، جس میں جنوبی کوریا کی کمپنی پارٹنر ہو گی۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں