روس اور یوکرین

یوکرین میں امریکی سیٹلائٹ استعمال ہوئے تو ان پر حملہ کردیں گے: روس کی تنبیہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یوکرین جنگ میں روس اور امریکہ تنازعہ خلا تک پہنچ گیا۔ روس نے یوکرین جنگ کے حوالے امریکی سیٹلائٹ کو نشانہ بنانے کی دھمکی دی ہے۔

جمعرات کو رشیا ٹوڈے ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق، روسی وزارت خارجہ نے عندیہ دیا کہ اگر یہ سیٹلائٹس یوکرائن-روسی لڑائیوں میں استعمال کیے گئے تو ان کو نشانہ بنانے کے لیے جائز اہداف بن سکتے ہیں۔

گزشتہ انتباہات

یہ دھمکی اس وقت سامنے آئی ہے جب امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے دو روز قبل اپنے روسی ہم منصب سرگئی شوئیگو کے ساتھ ایک فون کال میں یوکرین میں جاری جنگ کے دوران بھی امریکی روسی مواصلاتی ذرائع کو برقرار رکھنے کی اہمیت پر زور دیا تھا۔

قابل ذکر امر یہ ہے کہ تنازعہ کے خلا میں پھیلنے کے امکان کے متعلق پہلے بھی کئی انتباہات جاری کیے گئے تھے۔ اس ماہ کے اوائل میں برطانوی مسلح افواج کے کمانڈر ایڈمرل ٹونی راڈاکن نے خبردار کیا تھا کہ روس مغرب کے خلاف خلا میں جنگ شروع کر سکتا ہے۔ ان کا خیال تھا کہ روسی افواج خلا کے میدان میں بے پناہ صلاحیتوں کی حامل ہیں اور وہ روایتی زمینی لڑائی سے ہٹ کر چاہے پانی کے اندر ہو یا آسمان پر وہ دوسرے محاذوں کا سہارا لے سکتا ہے۔

یاد رہے 24 فروری کو یوکرین کی سرزمین پر روسی فوجی آپریشن کے آغاز سے واشنگٹن نے کئیف کا ساتھ دیا ہے اور اسے ہتھیاروں، میزائلوں اور دفاعی نظاموں کی مدد فراہم کی ہے۔

دوسری طرف ماسکو نے بارہا امریکی فوجی امداد کے ذریعے اپنی سرزمین کی سلامتی کو لاحق خطرات سے خبردار کیا ہے ۔

روس کہتا رہا کہ یوکرین افواج کو جدید ہتھیار اور طویل فاصلے تک مار کرنے والے میزائل فراہم کئے جانے کے خطرات موجود ہیں۔ روس نے بارہا یہ بھی کہا ہے کہ امریکہ کی قیادت میں مغرب اس تنازع کا ایک فریق بن چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں