جنوبی کوریا میں بھگدڑ مچنے سے ہلاکتوں کی تعداد146 ہوگئی!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیئول کے وسطی علاقے میں بھگدڑ مچنے سے ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 146 ہو گئی ہے اور ڈیڑھ سو سے زیادہ افراد زخمی ہیں۔

یہ واقعہ ہفتے کومقامی وقت کے مطابق رات 10 بج کر 20 منٹ پر پیش آیا۔ یونگسن فائراسٹیشن کے سربراہ چوئی سنگ بیوم نے بتایا کہ مذہبی تیوہار ہالووین کی تقریبات کے دوران میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد ہملٹن ہوٹل کے نزدیک واقع ایک تنگ گلی سے گذررہی تھی۔اس دوران میں ان میں دھکم پیل شروع ہوگئی اور بھگدڑ مچ گئی۔

حکام کے مطابق سیئول کے علاقے اتائی ون میں بھگدڑ کے اس واقعہ میں ہلاکتوں کی تعداد میں اضافے کا اندیشہ ہے کیونکہ بہت سے شدید زخمیوں کی حالت تشویش ناک ہے اورابھی امدادی سرگرمیاں جاری ہیں۔

جنوبی کوریا کی نیشنل فائرایجنسی کے ایک عہدہ دار مون ہیون جو نے کہا کہ ’’علاقے میں ابھی تک افراتفری کاعالم ہے اورہم زخمی ہونے والے افراد کی صحیح تعداد کا پتا لگانے کی کوشش کررہے ہیں‘‘۔

جائے وقوعہ کے نزدیک واقع اسپتالوں میں منتقل کیے گئے زخمی افراد میں غیرملکی بھی شامل ہیں لیکن ان کی درست تعداد نہیں بتائی گئی۔

جنوبی کوریا کے صدر یون سک یول نے حادثے کی اطلاع ملتے ہی سینیرمعاونین کے ساتھ ایک ہنگامی اجلاس کی صدارت کی اور علاقے میں ہنگامی طبی ٹیموں کو بھیجنے کا حکم دیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ وہ واقعہ کی اصل وجوہ کی تحقیقات کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں