سیلفی نے ترک لڑکی کی زندگی ختم کر دی

15 سالہ ملیکہ کا فون گرا، پکڑنے کیلئے توازن برقرار نہ رکھ سکی: فوٹیج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترکی کی ایک لڑکی ریاست موگلا کے علاقے اورتاجا میں چار منزلہ عمارت کی چھت سے گری، اسے قریبی ہسپتال لے جایا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکی۔ یہ سب کیسے ہوا؟ اہل خانہ نے تفصیلات بتا دیں۔

15 سالہ لڑکی ملیکہ گون کاناویزلر 4 منزلہ عمارت کی چھت کے کنارے پر سیلفی لینے کی کوشش کر رہی تھی لیکن اس کا موبائل فون ہاتھ سے گر گیا اور خودکار ردعمل کے طور پر لڑکی نے اسے جھپٹنے کی کوشش کی اور توازن کھو بیٹی اور بلندی سے سڑک کے درمیان آکر گری ۔ اس کے گرنے کا یہ منظر نگرانی والی کیمروں کی فوٹیج میں دیکھا گیا۔

انتہائی صدمے میں مبتلا اس کے اہل خانہ نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ ان کی بیٹی کی موت ایک سیلفی کی وجہ سے ہوئی، ملیکہ سیلفی لینے کی کوشش کر رہی تھی کہ اس کا فون اس کے ہاتھ سے گر گیا، وہ چھت کے کنارے سے اسے لینے کے لیے لپکی۔ فون پکڑنے کیلئے جھکی تو گلی میں گر گئی۔

ملیکہ کے اہل خانہ نے متنبہ کیا کہ لوگوں کو اپنے بچوں پر توجہ دینی چاہیے کہ وہ کہیں خطرناک مقامات سے تصاویر لینے کی کوشش تو نہیں کر رہے ۔

اگرچہ تھوڑی دیر بعد ایمبولینسیں نے ملیکہ کو ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کے بعد ہسپتال منتقل کردیا تھا لیکن اس کی شدید چوٹیں کئی گھنٹوں بعد اس کی موت کا باعث بن گئیں۔

اس کے ساتھ ہی ترک پولیس نے تحقیقات شروع کردی کہ معاملہ خودکشی کا ہے، حادثہ ہے یا اس میں کسی کی مجرمانہ کارروائی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں