کوریا میں خوفناک واقعے میں ہلاکتوں پر عرب و عالمی رہنماوں کا اظہار تعزیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

عرب رہنماوں کے علاوہ دنیا کے مختلف ممالک کے سربراہان نے کوریا کے ساتھ اظہار تعزیت کیا ہے۔ اس سلسے میں عالمی رہنماوں نے ٹویٹس کیے ہیں یا جنوبی کورین حکومت کو ارسال کیے گئے برقیوں میں تعزیت اور اظہار ہمدردی کیا ہے۔

جنوبی کوریا میں اتوار کے روز ہالو وین تقریبات میں ایک خوفناک بھگدڑ کے نتیجے میں 150 سے زائد افراد ہلاک جبکہ بہت سے زخمی ہو گئے تھے۔

ان ہلاک ہونےوالے افراد میں کورین شہریوں کے علاوہ چین، امریکہ ، روس ، ایران ، آسٹریلیا ، ویتنام ، ازبکستان ، قزاقستان، آسٹریا ، سری لنکا ، تھائی لینڈ ، فرانس اور ناروے کے باشندے بھی شامل ہیں۔

سیول میں سعودی سفیر نے اتوار کی رات اس سانحے پر تعزیتی سخت رنج و غم کا اظہار کیا۔ اپنے ٹویٹ میں سعودی سفیر نے کہا ' کورین حکومت اور کوریا کے دوست عوام کو اس افسوسناک موقع پر تعزیت پیش کرتے ہیں۔'

اسی سلسلے میں سعودی وزارت خارجہ نے بھی ایک تعزیتی بیان جاری کیا ، جس میں جنوبی کوریا کے ساتھ اس غمزدگی کے موقع پر اظہار ہمدردی کیا ہے۔

متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ محمد بن زاید النہیان نے بھی ایک برقیہ میں جنوبی کوریا کے صدر یون سوک یول کے ساتھ اظہار تعزیت کیا ہے۔

امارات کے سرکاری خبر رساں ادارے کے مطابق نائب صدر امارات شیخ محمد بن راشد المکتوم اور دبئی کے حکمران نے بھی جنوبی کوریا کے صدر کو ایسا ہی ایک تعزیتی پیغام بھیجا ہے۔ جس میں اس افسوسناک واقعے پر اظہار ہمدردی کیا گیا ہے۔

چین کے صدر شی نے بھی کوریا میں پیش آنے والے اس تکلیف دہ واقعے پر اظہار افسوس کیا ہے، کورین میڈیا کے مطابق چینی صدر نے کہا ہے ' میں یہ خبر سن کر صدمے میں ہوں، میں چین کی حکومت اور عوام کی طرف سے اس پر دلی تعزیت کا اظہار کرتا ہوں۔'

اس سے قبل اتوار کے روز جاپانی وزیر اعظم فومیو کی شی دا اپنے تویت کے ذریعے گہر رنج کا اظہار کرتے ہوئے کہا ' مین اس افسوسناک واقعے پر بہت غمزدہ ہوں ، جس میں بہت سی قیمتی جانیں چلی گئیں اور کئی نوجوان بھی ہم سے جدا ہو گئے۔'

امریکی صدر جوبائیدن اور ان کی اہلیہ جل جوبائیڈن نے بھی تعزیتی خط کورین صدر کو بھیجا ہے۔ ہم اس واقعے پر دکھی ہیں۔ اور کوریا کے عوام اور جمہوریہ کوریا کے لیے نیک تمناوں کا اظہار کرتے ہیں۔ ہم دعا کرتے ہیں کہ واقعے میں زخمی ہونے والے جلد سے جلد سحت یاب ہوں۔ '

برطانوی وزیر اعظم رشی سوناک نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا ' اس انتہائی تکلیف دہ وقت میں ہمارے جذبات ان تمام زخمیوں اور کورین عوام کے ساتھ ہیں۔'

ادھر معلوم ہوا ہے کہ ناروے کا ایک شہری بھی اس واقعے میں ہلاک ہوا ہے. تاہم ناروے کی وزارت خارجہ اس ہلاک ہونے والے کے بارے میں کوئی بھی انفارمیشن دینے سے انکار کر دیا ہے۔

البتہ ناروے کے وزیر خارجہ نے کہا ' میں اس غمزدہ کرنے موقع پر متاثرہ خاندانوں ، دوستوں اور ان سب کے ساتھ اہار تعزیت کرتا ہوں جو اپنے پیاروں سے محروم ہو گئے ہیں۔ '

کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو نے بھی کوریا میں ہونے والے اس افسوسناک واقعے پر اظہار افسوس کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں