امریکی سٹور مینیجر نے چھ افراد کو قتل کر کے خود کشی کرلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی ریاست ورجینیا میں عینی شاہدین نے بدھ کے روز بتایا ہے کہ ایک وال مارٹ اسٹور کے ایک مینیجر نے بریک روم میں اپنے ساتھی ملازمین پر فائرنگ کر دی، جس سے 6 افراد ہلاک ہو گئے۔ اس کے بعد اس نے خود کو گولی مار کر خود کشی کر لی۔ امریکا میں اجتماعی قتل عام کا ایک تازہ ترین واقعہ ہے۔

بریک روم میں موجود دو ملازمین نے بتایا کہ بندوق بردار جس کی شناخت 31 سالہ آندرے بِنگ کے نام سے ہوئی ہے ورجینیا کے چیسپیک کا رہنے والا ہے۔ اس نے فائرنگ کے وقت کچھ نہیں کہا۔ یہ واقعہ رات کو پیش آیا جب رات شفٹ سے قبل منگل کو دیر گئے جمع ہونے والے کارکنوں پر فائرنگ کی گئی۔

ایک عینی شاہد خاتون نے بتایا کہ"میں نے اپنے 3 ساتھی کارکنوں اور دوستوں کو اپنے سامنے قتل ہوتے دیکھا۔ آندرے نے انہیں خون میں نہلا دیا تھا۔

اس حملے میں کم از کم 4 دیگر زخمی ہوئے۔یہ حملہ اس وقت ہوا جب 50 کے قریب افراد اسٹور کے اندر موجود تھے۔

حکام نے اعلان کیا کہ وہ اب بھی بنگ کے مقاصد کی چھان بین کر رہے ہیں، جو ایک پستول اور گولہ بارود کے کئی راؤنڈز سے مسلح ہو کر آیا تھا۔ شہر کی پولیس کا کہنا ہے کہ کوئیک ریسپانس فورس ٹیم نے اس کے گھر پر تلاشی کے وارنٹ پر عمل درآمد کرتے ہوئے گھر کی تلاشی لی ہے۔

اس نے ایک بیان میں مزید کہا کہ "تفتیش کار شوٹر کے پس منظر اور شوٹنگ کے ممکنہ محرکات کے بارے میں مزید جاننے کے لیے کام کر رہے ہیں۔"

یہ واقعہ ہفتے کے روز کولوراڈو اسپرنگس کے ایک نائٹ کلب میں 5 افراد کی ہلاکت کے بعد سامنے آیا ہے اور امریکی صدر جو بائیڈن نے بدھ کے سانحے کو "احمقانہ تشدد کی ایک اور ہولناک کارروائی" قرار دیتے ہوئے اس ماہ کے شروع میں ہونے والی فائرنگ کا حوالہ دیا جس میں ورجینیا یونیورسٹی کے 3 طالب علم ہلاک ہوگئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں