امریکہ کے ساتھ مشقوں میں مختلف منظر ناموں پر کام کیا: اسرائیلی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی فوج نے امریکہ کے ساتھ مشترکہ مشقوں کے اختتام کا اعلان کرتے ہوئے بتایا ہے کہ اسرائیل نے ان مشقوں میں خطے میں خطرات سے نمٹنے کے لیے مختلف منظرنامے تیار کیے ہیں۔

اسرائیلی فوج نے مزید کہا کہ امریکہ کے ساتھ مشقوں میں طویل فاصلے تک مار کرنے والے میزائلوں کو روکنا بھی شامل تھا۔

امریکی اور اسرائیلی فضائیہ نے فضائی ایندھن بھرنے کی مشق بھی کی۔

سالوں میں سب سے بڑی مشق

اسرائیلی فضائیہ ان مشقوں کو برسوں میں اپنی سب سے بڑی مشقوں میں سے ایک قرار دیا کیونکہ یہ مشقیں امریکی فضائیہ کے ساتھ مل کر ایرانی جوہری پروگرام کے خلاف جارحانہ حملوں کے مقابلے سے متعلق بھی تھیں۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ واشنگٹن اور تل ابیب نے ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں جس کے تحت امریکہ اسرائیل کو جنگ کے وقت اس کے دفاع میں مدد فراہم کرے گا۔ دونوں فوجوں نے حالیہ برسوں میں کئی مشترکہ فضائی دفاعی مشقیں کی ہیں۔

اسرائیل میں اگلے برس اپنی فورسز کیلئے 58 ارب شیکل دفاعی بجٹ مختص کیا ہے جس سے توقع ہے کہ اسرائیلی فورسز کو ایران کی جانب سے لاحق خطرات سے نمٹنے کا موقع ملے گا۔ دفاعی بجٹ میں سے خاص اس مقصد کیلئے 3.5 ارب شیکل مختص کئے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں