ایرانی دفتر خارجہ میں اپنے سفیر کی طلبی پر فرانس کی شدید مذمت

ایران میں بنیادی آزادیوں پر جاری حملوں کی شدید مذمت کرتے رہیں گے: پیرس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فرانس نے تہران میں اپنے سفیر نکولس روشے کو جمعرات کے روز ایرانی وزارت خارجہ میں طلب کرنے پر اپنے عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے اور ایران میں بنیادی آزادیوں پر مسلسل جبر اور متعدد حملوں کی ایک مرتبہ پھر شدید مذمت کر دی ہے۔

پیرس نے زور دے کر کہا کہ آزادی اور اپنے حقوق کے احترام کے لیے مظاہرین کی خواہشات جائز ہیں اور انہیں سنا جانا چاہیے ۔

اٹھائیس نومبر کو فرانس کی قومی اسمبلی میں ایران میں آزادی کی تحریک کی حمایت میں قرار داد منظور کی گئی تھی۔ تہران نے جواب میں 30 نومبر کو فرانسیسی سفیر کو طلب کرکے اس قرارداد کی مذمت کی تھی۔

ایرانی سرکاری نیوز ایجنسی ارنا کے مطابق ایرانی وزارت خارجہ نے بدھ کے روز فرانسیسی سفیر نکولس روشے کو طلب کیا تھا۔ فرانسیسی حکام کی جانب سے لگائے گئے بے بنیاد الزامات کے خلاف شدید احتجاج کا اظہار کیا تھا اور فرانسیسی قرار داد کو ایران میں ناقابل قبول مداخلت قرار دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں