بشارالاسد نے ایردوآن کی ملاقات کی پیشکش ٹھکرا دی : رایٹرز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خبر رساں ادارے ’رائیٹرز‘ نے رپورٹ کیا ہے کہ شام کے صدر بشار الاسد نے اپنے ترک ہم منصب رجب طیب ایردوآن سے ملاقات کی تجویز مسترد کر دی ہے۔ ذرائع کے حوالے سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ دمشق نے اس معاملے کو فی الحال ملتوی کیا ہے۔ یہ ملاقات ہو سکتی ہے۔

ایجنسی نے 3 ایسے ذرائع کا حوالہ دیا جو شام اور ترکی کے درمیان مذاکرات سے آگاہ ہیں۔ شام میں بحران کے آغاز کے بعد سے ایک دہائی سے زائد عرصے تک تلخ دشمنی کے بعد ایردوآن کے ساتھ سربراہ اجلاس منعقد کرنے کے لیے روسی ثالثی کی کوششوں کی مزاحمت کر رہا ہے۔

تاہم دو ترک ذرائع جن میں سے ایک اعلیٰ عہدیدار ہے نے کہا ہے کہ دمشق صرف اس معاملے کو ملتوی کر رہا ہے اور معاملات دونوں رہ نماؤں کے درمیان حتمی ملاقات کی طرف جا رہے ہیں۔"

ایردوآن نے دمشق کے ساتھ میل جول کے لیے اپنی رضامندی کا عندیہ دیا تھا۔ گذشتہ ماہ اپنے مصری ہم منصب عبدالفتاح السیسی سے ملاقات کے ایک ہفتے بعد بیان میں انہوں نے کہا تھا کہ ترکی شام کے ساتھ معاملات کو درست راستے پر ڈال سکتا ہے۔"

ایردوآن نے ہفتے کے آخر میں ایک ٹیلی ویژن مباحثے میں کہا کہ "سیاست میں کوئی دشمنی نہیں ہو سکتی۔"

اس حوالے سے ’رائیٹرز‘ نے تین ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ایجنسی کے مطابق بشارالاسد نے ایردوآن کے ساتھ روسی صدر ولادیمیر پوتین کی موجودگی میں ملاقات کی تجویز مسترد کر دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں