یمن اور حوثی

حوثی ملیشیا نے ایرانی ساختہ ڈرونز سے مسجد پر بمباری کردی، 5 افراد ہلاک و زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کے وزیر اطلاعات معمر الاریانی نے کہا ہے کہ حوثی ملیشیا نے ایرانی ساختہ ڈرونز سے ایک مسجد پر بمباری کردی ہے جس سے 5 افراد ہلاک و زخمی ہوگئے۔

ایران سے وابستہ دہشت گرد حوثی ملیشیا نے الحدیدہ گورنری میں حیس ضلع کے مغرب میں واقع گاؤں الرون کی ایک مسجد پر ایرانی ساختہ ڈرون سے دو میزائل داغے ۔ مسجد میں نماز جمعہ کے باعث بھیڑ تھی۔

الاریانی نے کہا کہ یہ گھناؤنا قتل عام ہے جو دہشت گرد حوثی ملیشیا کے جرائم کے سلسلے میں مزید اضافہ کر رہا ہے۔ رہائشی محلوں، گھروں، مساجد اور عوامی بازاروں کو منظم طریقے سے نشانہ بنانا ایک مکمل جنگی جرم ہے۔ جس سے حوثی ملیشیا کا مقصد واضح ہوجاتا ہے۔ معصوم شہریوں کے قتل عام پر بین الاقوامی خاموشی ناقابل فہم ہے۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی برادری، اقوام متحدہ، امریکی سفیروں، انسانی حقوق کی تنظیموں اور اداروں سے اس گھناؤنے جرم پر واضح موقف جاری کیا جانا چاہیے۔ حوثی ملیشیا کو بین الاقوامی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کرنے کے لیے کام کرنے اور قانونی چارہ جوئی کی ضرورت ہے۔ حوثی ملیشیا رہنما بین الاقوامی عدالتوں میں "جنگی مجرم" کے طور پر پیش کئے جانے چاہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں