سعودی عرب اے ایف سی خواتین ایشیائی کپ 2026 کی میزبانی کاامیدوار،باضابطہ درخواست پیش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی فٹ بال فیڈریشن (ساف) نے ایشیائی فٹ بال کنفیڈریشن (اے ایف سی) ویمنزایشیائی کپ 2026 کے فائنل مقابلوں کی میزبانی کے لیے باضابطہ طور پر اپنی درخواست جمع کرادی ہے۔

ایشین فٹ بال کنفیڈریشن کے ایشیائی کپ کی میزبان فائل کے ڈائریکٹر نے ملائیشیا کے دارالحکومت کوالالمپور میں اپنے صدر دفتر میں سعودی وفد کا خیرمقدم کیا۔سعودی خواتین فٹ بال ٹیم کی پہلی اسسٹنٹ کوچ دونا رجب، سعودی قومی ٹیم کی رکن رغدحِلمی اور نوجوان کھلاڑی ماریہ بغفار نے میزبانی کے لیے بولی کی درخواست کنفیڈریشن کوپیش کی۔

ساف کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے صدریاسرالمشال نے کہا کہ اس ٹورنامنٹ کی میزبانی سے مملکت اور خطے میں خواتین کے فٹ بال کے کھیل میں نئے اُفق کھلیں گے۔

انھوں نے کہا:’’مملکت کے پاس کھیلوں کا ایک مضبوط بنیادی ڈھانچاہے جو اسے ایشیائی خواتین کپ کی میزبانی کے قابل بناتا ہے کیونکہ وہ براعظم ایشیا اوردنیا بھر سے ہرسال لاکھوں مہمانوں کا خیرمقدم کرتا ہے‘‘۔

المشال نے کہا:’’ہم نے اس ٹورنامنٹ کے لیے ابتداہی میں اعلیٰ درجے کی تنظیم کے مطابق تیاری کی ہے۔ سعودی فائل جامع اور تفصیلی ہے جو خواتین کے ایشین کپ 2026 کے فائنل کو بہتر بنائے گا‘‘۔

انھوں نے وضاحت کی کہ سعودی عرب خواتین کے ایشیائی کپ 2026 کے فائنل مقابلوں کی میزبانی کرکے سعودی فیڈریشن کو خواتین کے فٹ بال کے ایک ممتاز ورژن کے ساتھ پیش کرنا چاہتا ہے،یہ ایک ایسا عالمی ایونٹ ہوگا،جو مملکت کوعالمی کھیلوں کے نقشے پررکھتا ہے‘‘۔

سعودی فٹ بال ایسوسی ایشن کی فائل میں ٹورنامنٹ کی ضروریات، شرائط اورمعیار شامل ہیں،اس کے علاوہ علاقائی اوربین الاقوامی کھیلوں کے مقابلے اور واقعات بھی شامل ہیں جن کی سعودی عرب نے گذشتہ چند سال میں میزبانی کی ہے اوراسے عالمی سطح پر پذیرائی ملی ہے۔

سعودی عرب اس ٹورنامنٹ کی میزبانی کے لیے اردن، آسٹریلیا اورازبکستان کے ساتھ مقابلہ کررہا ہے اور توقع ہے کہ ایشیائی فٹ بال کنفیڈریشن اپنا فیصلہ کرے گی اور 2023ء میں ٹورنامنٹ کے میزبان ملک کا اعلان کرے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں