روس اور یوکرین

یوکرینی ڈرونز کا روس کے 2 فضائی اڈوں پر حملہ، 3 روسی فوجی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

روسی وزارت دفاع نے اعلان کیا کہ ملک کے مرکز میں واقع 2 روسی فضائی اڈوں پر پیر کو یوکرین کے ڈرونز نے حملہ کر دیا جس میں 3 روسی فوجی مارے گئے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ پیر کی صبح "کیف حکومت نے سوویت یونین کے ڈیزائن کردہ ڈرونز سے ریازان کے علاقے میں دیاغیلیف ایئر بیس اور سراتوف کے علاقے میں اینجلز بیس پر حملے کئے۔ ان حملوں کے نتیجے میں 3 روسی فوجی ہلاک ہوگئے۔

رپورٹس میں کہا گیا کہ ایک دھماکہ ایک اڈے پر ہوا جس میں جوہری ہتھیار لے جانے کی صلاحیت والے سٹریٹجک بمبار طیارے موجود تھے۔ ان طیاروں نے یوکرین کے خلاف حملے شروع کرنے میں حصہ لیا تھا۔

فوری طور پر یوکرین نے اور نہ ہی روسی حکام نے دھماکوں کی ممکنہ وجہ کے بارے میں کوئی تبصرہ کیا ہے۔

ایندھن کے ٹرک میں دھماکہ

روس کی سرکاری خبر رساں ایجنسی "ریا نوووستی" نے اطلاع دی کہ 3 روسی فوجی ہلاک اور 6 دیگر زخمی ہوئے ہیں۔ ایک طیارہ پیر کی صبح سویرے اس وقت تباہ ہوا جب ریازان میں مغربی روس کے ایک فضائی اڈے پر ایندھن کا ٹرک پھٹ گیا۔

اڈے پر طویل فاصلے تک مار کرنے والے طیارے موجود ہیں جو ہوا میں بمبار طیاروں کو ایندھن فراہم کرتے ہیں۔

اس کے علاوہ دریائے وولگا کے کنارے سراتوف کے علاقے میں حکام نے کہا کہ وہ اینجلز ایئر بیس کے علاقے میں دھماکے کی اطلاعات کی جانچ کر رہے ہیں جہاں موجود ٹی یو۔ 95 اور ٹی یو ۔ 160 سٹریٹجک بمبار طیاروں نے یوکرین پر حملوں میں حصہ لیا تھا۔

سراتوف علاقے کے گورنر رومن بسارگین نے کہا کہ شہری تنصیبات کو کوئی نقصان نہیں پہنچا، انہوں نے مزید کہا کہ حکام اس بات کی جانچ کر رہے ہیں کہ آیا فوجی تنصیبات پر کوئی حادثہ تو نہیں ہوا۔

اینجلز بیس کے قریب دھماکہ

علاقائی میڈیا نے اطلاع دی کہ اینجلز بیس کے قریب ایک زوردار دھماکے کی آواز سنی گئی۔ کچھ مقامی افراد کے حوالے سے بتایا گیا کہ انہوں نے علاقے سے روشنی کی چمک دیکھی۔

یوکرین میں صدر زیلنسکی کے دفتر نے پیر کو کہا کہ جنوبی وسطی یوکرین میں ان کے آبائی شہر کریوی ریہ پر تین میزائل حملے ہوئے جس میں ایک فیکٹری ورکر ہلاک اور تین دیگر زخمی ہوگئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں