تنزانیہ کی خاتون صدر کا یوم آزادی کی تقریبات کا فنڈ خصوصی بچوں پر لگانے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

افریقی ملک تنزانیہ کی صدر سامعہ سالوہو حسن نے 9 دسمبر کی مناسبت سے یوم آزادی کی ہونے والی تقریبات منسوخ کرتے ہوئے ان کے فنڈز سے خصوصی بچوں کے لئے رہائش گاہیں تعمیر کرنے کا اعلان کیا ہے۔

غیر ملکی خبررساں ایجنسی 'اے پی' کے مطابق تنزانیہ کی خاتون صدر کے حکم کے مطابق تنزانیہ کے 61 ویں یوم آزادی کی تقریبات پر خرچ ہونے والی 4 لاکھ 45 ہزار ڈالرز کی رقم کو ملک میں خصوصی بچوں کی تعلیم کے 8 پرائمری اسکولوں میں ہاسٹل کی تعمیر کے لیے استعمال کی جائے گی۔

تنزانیہ کے وزیر مملکت نے پیر کے روز کہا کہ تقریبات کا بجٹ صدر کے حکم کے مطابق انتظامیہ کو تقسیم کر دیا گیا ہے۔

تنزانیہ میں عام طور پر یوم آزادی کی تقریبات شاندار طریقے سے سرکاری طور پر منائی جاتی ہیں۔تاہم یہ پہلا موقع نہیں ہے جب تنزانیہ نے جشن آزادی کی تقریبات منسوخ کی ہیں۔

اس سے قبل 2015 میں اس وقت کے صدر جان مگوفولی نے یوم آزادی کی تقریبات منسوخ کیں اور فنڈز کو تجارتی دارالحکومت دار السلام میں سڑکوں کی تعمیر پر خرچ کرنے کا حکم دیا تھا جبکہ 2020 میں بھی انہوں نے ایسا ہی کیا اور ہدایت کی کہ بجٹ طبی سہولیات کے لیے استعمال کیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں