کروشیاکی ٹیم مراکش کو2-1 سے شکست دے کر کانسی کے تمغا کی حق دار!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کروشیا نے قطر میں جاری فٹ بال عالمی کپ کے تیسرے پوزیشن کے میچ میں مراکش کو 2-1 سے شکست دے کرکانسی کا تمغا جیت لیا ہے۔

دوحہ کے خلیفہ انٹرنیشنل اسٹیڈیم میں ہفتے کوکانسی کے تمغے کے لیے کھیلے گئے میچ میں دونوں ٹیموں نے شاندار کھیل پیش کیا ہے لیکن کروشیا کی ٹیم نے پہلے ہاف ہی میں ایک گول کی برتری قائم کرلی تھی جو میچ کے اختتام تک برقرار رہی۔

پہلے ہاف کے آخر میں میسلاف اورسک کا دیر سے گول فیصلہ کن ثابت ہواکیونکہ پہلے نو منٹ کے اندر اندر دونوں ٹیموں نے ایک ایک گول کرکے میچ میں جان ڈال دی تھی اور مراکش کے اشرف دری نے کروشیا کے جوسکوگوارڈیول کا گول برابرکردیا تھا۔

کانسی کا تمغا دونوں ٹیموں کو سیمی فائنل میں مایوسی کا سامنا کرنے کے بعد تسلی سے زیادہ کچھ نہیں ہوسکتاتھا،لیکن کروشیا اورمراکش بالترتیب ارجنٹائن اور فرانس سے ہارنے کے بعد اپنے کھیل میں اصلاح کے خواہاں نظر آئے۔

مراکش کے شائقین قطرمیں اپنی ٹیم کی حمایت کے لیے بڑی تعداد میں جمع ہوئے تھے۔انھوں نے کروشیا کے کھلاڑیوں کا مذاق اڑایا جب بھی ان کے پاس گیند کاقبضہ ہوتا توان کی سیٹیاں بھرے ہوئے خلیفہ انٹرنیشنل اسٹیڈیم کے اندرگونج رہی ہوتی تھیں۔

تاہم اس سے کروشیا کے کھلاڑیوںکو کوئی فرق نہیں پڑا۔انھوں نے کھیل کا آغازجارحانہ انداز میں کیا اور ساتویں منٹ میں چالاکی سے گول کرکے برتری حاصل کرلی لیکن اس کے صرف دو منٹ کے بعد مراکشی کھلاڑی نے گول کرکے مقابلہ ایک ایک سے برابر کردیا۔

اس میچ کا دوسرا ہاف پہلے ہاف کی طرح تیزرفتار یا پرجوش نہیں تھا کیونکہ ایک طویل ٹورنامنٹ کے بعد دونوں ٹیموں میں اس ساتویں میچ میں تھکاوٹ کے آثار نمایاں نظرآرہے تھے۔

مراکش کے یوسف النصیری نے فاضل وقت میں میچ برابرکرنے کی بہترین کوشش کی تھی لیکن وہ گول کرنے میں ناکام رہے اور کروشیا فاتح ٹھہرا۔اس کی ٹیم 1998ء میں بھی فٹ بال عالمی کپ میں تیسرے نمبر پررہی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں