افغانستان:درہ سالنگ میں آئل ٹینکر میں آگ لگ گئی، 12 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

افغانستان کے بلند ترین سالنگ گذرگاہ میں ایک آئل ٹینکر الٹ گیا جس کے نتیجے میں کئی گاڑیوں کو آگ لگ گئی۔اس سے 12 افراد ہلاک اور کم سے کم 40 زخمی ہو گئے ہیں۔

یہ واقعہ کابل کے شمال میں واقع صوبہ پروان میں واقع اس درے میں ہفتے کی شب پیش آیا جس کے نتیجے میں پہاڑی درے کے دونوں اطراف کے مسافر پھنس کررہ گئے۔

وزارتِ تعمیراتِ عامہ کے ترجمان حمیداللہ مصباح نے واقعے میں 12 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے اور بتایا ہے کہ 37 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ سالنگ سرنگ میں ایک آئل ٹینکر الٹ گیا اور اس میں آگ لگ گئی جس کے نتیجے میں وہاں موجود کئی اور گاڑیوں کو بھی آگ لگ گئی۔

صوبہ پروان میں محکمہ صحت کے ایک سینیرعہدہ دارعبداللہ افغان مل نے بتایا کہ ہلاک ہونے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں جو بری طرح جھلس گئے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ مہلوکین میں یہ شناخت کرنا بہت مشکل تھا کہ کون مرد تھا اور کون عورت۔

حکام نے بتایا کہ یہ درہ اب ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا ہے اور ہیلی کاپٹروں کے ذریعے امدادی ٹیمیں جائے وقوعہ پربھیجی گئی ہیں۔

سالنگ پاس دنیا کی سب سے اونچی پہاڑی شاہراہوں میں سے ایک ہے اور یہ قریباً 3،650 میٹر(12،000 فٹ) کی اونچائی پرواقع ہے۔اس کو1950ء کی دہائی میں سوویت دور کے ماہرین نے تعمیر کیا تھا اوراس میں 2.6 کلومیٹرطویل سرنگ بھی شامل ہے۔

یہ درہ ہندوکش کے پہاڑی سلسلے سے گزرتا ہے جو دارالحکومت کابل کو ملک کے شمال سے ملاتاہے۔اس کوانجینئرنگ کے کارنامے کے طور پرسراہا جاتا ہے لیکن سالنگ پاس اکثرسردیوں میں حادثات، شدید برفباری اور برفانی تودے گرنے کی وجہ سے کئی دن تک ٹریفک کے لیے بند رہتا ہے۔

یادرہے کہ 2010 میں سالنگ پاس میں برفانی تودے گرنے سے 150 سے زیادہ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں