سعودی،برطانوی وزراءخزانہ کاسرمایہ کاری کے مواقع پرتبادلہ خیال،سمجھوتوں پردست خط

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی وزیرخزانہ محمدالجدعان اور ان کے برطانوی ہم منصب جیریمی ہنٹ نے دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون کے فروغ کے لیے مفاہمت کی متعدد یادداشتوں پر دست خط کیے ہیں۔

سعودی عرب کی سرکاری پریس ایجنسی (ایس پی اے) نے ایک بیان میں بتایا ہے کہ محمدالجدعان اسی ہفتے برطانیہ کے سرکاری دورے پر تھے اور انھوں نے 20 دسمبر کو جیریمی ہنٹ سے ملاقات کی تھی۔اس میں دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تعلقات کے علاوہ اہم عالمی اقتصادی اموراورسعودی عرب کی معیشت کے امیدافزاپہلو پربھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

ایس پی اے کے مطابق ملاقات میں فریقین کے درمیان مفاہمت کی ایک یادداشت طے پائی ہے۔اس کا مقصد دونوں ممالک کے درمیان مالی ترقی اورسرکاری مالیاتی خدمات کے شعبوں میں مواقع کو اجاگر کرنا، تجربات کا تبادلہ کرنا اوردوطرفہ تعاون کو بڑھانا ہے۔

محمدالجدعان نے اپنے سرکاری ٹویٹراکاؤنٹ پر کہا کہ انھوں نے برطانوی وزیربرائے سرمایہ کاری لارڈ جانسن سے بھی ملاقات کی۔ان سے اقتصادی اور مالی تعلقات پر تبادلہ خیال کیا اورمملکت میں سرمایہ کاری کےفروغ کے مواقع پربات چیت کی۔

سعودی وزیرخزانہ نے برطانیہ کے متعدد سرمایہ کاروں اور سی ای اوزکے ساتھ بیٹھک میں مملکت کی معیشت اور ویژن 2030 کے تحت اصلاحات پرتبادلہ خیال کیاہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹرپراپنے پیغام میں وزیرنےبتایا کہ سعودی برطانیہ مشترکہ بزنس کونسل کے زیراہتمام ہونے والے اجلاس میں میں نے متعدد سرمایہ کاروں اور سی ای اوز سے ملاقاتیں کی ہیں۔ان میں سعودی عرب کے امید افزا معاشی امکانات اورسعودی ویژن 2030 کے تحت معاشی اور مالیاتی اصلاحات کے لیے جاری منصوبوں پرتبادلہ خیال کیا ہے۔

محمدالجدعان نے لندن کے میئرنکولس لیونز کے ساتھ بھی سرمایہ کاری کے مواقع پر بات چیت کی ہے اور ان سے گفتگو میں مملکت میں پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت مواقع پرروشنی ڈالی۔ دونوں نے نج کاری پروگرام اوراس میں سعودی عرب کی شراکت داری کے مواقع پربھی تبادلہ خیال کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں