اٹلی میں ایک طرف جھکا مشہور زمانہ ’’پیسا ٹاور‘‘ اب مزید نہیں جُھک رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اٹلی میں ایک طرف جھکے ہوئے مشہور زمانہ سیاحتی مقام پیسا ٹاور دیکھنے کے خواہش مندوں کے لیے ایک ناخوشگوار خبر یہ ہے کہ سیاحوں کی توجہ کا مرکز رہنے والے پیسا ٹاور کے بارے میں ہونے والے ایک تازہ سروے میں انکشاف ہوا ہے کہ یہ ٹاور پیسا اب جھک نہیں رہا ہے۔

مطالعے میں دکھایا گیا ہے کہ عمارت جس نے طویل عرصے سے اٹلی میں سائنسدانوں اور ماہرین تعمیرات کو پریشان کیے رکھا اب کئی سال سے ایک ہی جگہ نہ صرف کھڑی ہے بلکہ اس کا رخ اب سیدھا ہونے لگا ہے۔

ٹاور کو اپنی جگہ کھڑا کرنے کا گیارہ سال پرانا منصوبہ

ماہرین نے مزید کہا کہ 11 سال پہلے ٹاور کو مستحکم کرنے کے منصوبے نے 2001 میں اس کے انحراف کو 15 انچ کم کر دیا تھا۔ اس کے بعد سے 21 سالوں میں ٹاور خود کو مزید 1.6 انچ (4 سینٹی میٹر) سیدھا کر چکا ہے۔

تازہ ترین اعداد وشمار ’اوپیرا پریمازیل ڈیلا پسانا فاؤنڈیشن‘ (OPA) کی طرف سے فنڈ کیے گئے ایک مطالعہ کا نتیجہ بھی ہیں جہاں ماہرین یہ جاننا چاہتے تھے کیا ان کی پیشین گوئیاں درست تھیں یا نہیں۔

یہ ٹاور برقرار رہنے میں کامیاب رہا جب کہ جھکاؤ بھی کم ہو گیا تھا،لیکن پھر بھی یہ ہر سال اوسطاً 0.02 انچ (0.5 ملی میٹر) کے حساب سے ڈولتا ہے۔ یونیورسٹی آف پیسا کے ایک جیو ٹیکنولوجسٹ کے مطابق ٹاور کی پوزیشن توقع سے بہتر ہے۔

زلزلے بھی ٹاور کا کچھ نہ بگاڑ سکے

قابل ذکر امر یہ ہے کہ ہر سال ہزاروں سیاح اٹلی کے پیسا کے جھکنے والے ٹاور کو دیکھنے آتے ہیں تاکہ اس میں ہونے والی ڈھلوان سے ہم آہنگ مزاحیہ تصاویر لیں۔

قرون وسطی کا ٹاور جو اس زمانے میں جمہوریہ پیسا کی سمندری طاقت کی علامت تھا بغیر کسی نقصان کے آج تک قائم ہے حالانکہ 1280ء سے اب تک اس علاقے میں کم از کم 4 شدید زلزلے آ چکے ہیں۔

سنہ2018ء کی ایک تحقیق میں یہ بھی پتہ چلا ہے کہ ٹاور کی بنیاد کی مٹی کی نرمی ہی اسے زلزلوں سے بچانے کا سبب ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں