برطانوی سیاح کو دھوکہ دینے والا مراکشی نوسرباز ڈرائیور گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مراکش میں ایک ٹیکسی ڈرائیورنے غیرملکی سیاح کے ساتھ فراڈ کرنے کی کوشش مگراس کی یہ لالچ اس کے گلے پڑ گئی۔

مقامی میڈیا میں شائع ہونے والی تفصیلات کے مطابق برطانوی سیاح کے ساتھ فراڈ کرنے والے نوسرباز ٹیکسی ڈرائیور کو گرفتار کرکے اس کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق شارٹ ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ ’ٹک ٹاک‘ پر80 لاکھ فالورز والے برطانوی سائمن ویلسن کے ساتھ یہ فراڈ اس وقت کیا گیا جب وہ قطر سے ہوتے ہوئے مراکش پہنچے۔ مراکش کے ایک ہوائی اڈے پر اترنے کے بعد انہوں نے شہر کے اندر جانے کے لیے ایک ٹیکسی ڈرائیور سے بات کی۔

ٹیکسی ڈرائیور نے اجنبی شخص کو دیکھ کراس سے بہت زیادہ کرایہ مانگا اور کرائے کی مد میں اس نے 350 درھم مانگے۔ یہ رقم امریکی کرنسی میں 35 ڈالر بنتی ہے۔ برطانوی سیاح ناواقفیت کی وجہ سے یہ رقم دینے کو تیار ہوگیا، حالانکہ ہوائی اڈے سے اس کی منزل تک زیادہ سے زیادہ ٹیکسی کی اجرت 70 درہم بنتی تھی۔

مراکشی "ہیسپریس" ویب سائٹ کے مطابق جمعرات کو مراکش شہر میں اقتصادی امور اور رابطہ کاری کے محکمے نے واقعے کی وجہ سے ٹیکسی ڈرائیور کو کام سے مستقل طور پر معطل کر دیا ہے۔

شہر کے حکام کا کہنا تھا کہ "ایک بار جب انہیں برطانوی سیاح کی جانب سے ریکارڈ کی گئی ایک ویڈیو ٹیپ دکھائی گئی جس میں اسے بلیک میل کیا گیا تو انہوں نے لائسنس کے مالک کے بارے میں تحقیقات شروع کیں۔ ڈرائیور کی شناخت جاننے کے بعد انہوں نے فائل پر فیصلہ کرنے کے لیے میٹنگ بلائی۔ اجلاس میں ملزم کو فوری گرفتار کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

برطانوی سائمن ویلسن نے بلیک میل کیے جانے کی ویڈیو اپنے ٹک ٹاک چینل پر پوسٹ کی تو اسے اب تک بیس لاکھ سے زیادہ لوگ دیکھ چکے ہیں۔ صرف یہی نہیں بلکہ اس نے بتایا کہ جب وہ ٹیکسی سے اترنے لگا تو اس نے جیب سے نکال کر ڈرائیور کو 400 درہم دیئے اور باقی رقم واپس کرنے کو کہا مگر ڈرائیور نے باقی رقم واپس کرنے سے انکار کر دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں