یواے ای کایوکرین میں سرد گھروں کو گرم رکھنے کے لیے جنریٹرزبھیجنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات یوکرین میں جاری جنگ سے متاثرہونے والے گھروں کو بجلی مہیّا کرنے کے لیے 2500جنریٹر بھیجے گا۔

الامارات کی خبررساں ایجنسی وام نے ہفتے کے روز اطلاع دی ہے کہ 2،500 یونٹوں میں سے 1،200 کو یوکرین پہنچانے سے پہلے ہفتے کے روز پولینڈ کے دارالحکومت وارسا میں پہنچایا جائے گا۔باقی یونٹوں کو جنوری سے پہلے بھیج دیا جائے گا۔

یواے ای کی بین الاقوامی تعاون کی وزیر مملکت ریم بنت الہاشمی کے حوالے سے وام نے کہا کہ یہ امداد یوکرین کے بحران کے انسانی اثرات کو کم کرنے کے لیے ملک کی مسلسل کوششوں کا حصہ ہے۔

ان جنریٹرز کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ ان کی بجلی کی پیداوار3.5 سے 8 کلوواٹ تک ہے۔البتہ یہ پیداوار استعمال ہونے والے ایندھن کی قسم پربھی منحصر ہے، جنریٹرز ایک عام خاندان کو مسلسل پانچ سے آٹھ گھنٹے تک بجلی مہیا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ذرائع کے مطابق ایئرکنڈیشنرزکو بھی ان جنریٹروں کے ذریعے چلایا جا سکتا ہے۔

متحدہ عرب امارات کی جانب سے یوکرین کو مہیا کیے جانے والےیہ جنریٹر10 کروڑ ڈالر کے امدادی پیکج کا حصہ ہیں۔

اب تک یواے ای پولینڈ، مالدووا اور بلغاریہ میں یوکرین کے پناہ گزینوں کے لیے 360 ٹن خوراک اور طبی امداد سے لدے آٹھ طیارے بھیج چکا ہے۔

اس ہفتے کے اوائل میں روس نے یوکرین کے دارالحکومت کیف اور اس کے آس پاس بجلی کے بنیادی ڈھانچے پر کامیکازڈرونز سے حملہ کیا جس سےلاکھوں افراد بجلی سے محروم ہوگئے تھے جبکہ درجہ حرارت نقطہ انجماد سے بھی نیچے گرچکا ہے۔

اقوام متحدہ کے مطابق روس نے ڈرونز سے یہ حملے اکتوبرمیں اس وقت شروع کیے تھے جب اس کو فروری میں ہونے والے حملے کے بعد میدان جنگ میں پہلی مرتبہ یوکرینی فوج سے پے در پے مختلف محاذوں پرشکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔روسی ڈرون حملوں سےیوکرین کا بجلی کا کم سے کم 50 فی صد انفراسٹرکچرتباہ ہوچکا ہے۔

امریکا اور اس کے اتحادیوں نے فضائی دفاعی نظام کی ترسیل کے دوران میں یوکرین میں ہدف بنائے گئے سازوسامان کی مرمت اور اسے تبدیل کرنے کے لیے کروڑوں ڈالر کا وعدہ کیا ہے۔اس فضائی دفاعی نظام نے یوکرین کو روسی میزائلوں اور ڈرونزسے اہم بنیادی ڈھانچے کی حفاظت میں مدد مہیّا کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں