ترکی کی کرنسی کی قدرمیں ریکارڈ کمی،ایک ڈالر18.75 لیرا کا ہوگیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی کے لیرا کی قدر میں سوموار کوڈالر کے مقابلے ریکارڈ کمی واقع ہوئی ہے اور ایک ڈالر 18.75 لیرا کا ہوگیا ہے۔اس طرح اس سال کے دوران میں لیرا کی قدرمیں قریباً 30 فی صد تک کمی واقع ہوچکی ہے۔

انقرہ حکومت نے رواں سال شرح مبادلہ کو سختی سے کنٹرول کرنے کی پالیسی پرعمل کیا ہے لیکن اس کے باوجود لیرا کی قدر میں کمی کا سلسلہ جاری ہے۔

سوموارکو گرینچ معیاری وقت 0518 جی ایم ٹی تک لیراکی قدر میں جمعہ کے مقابلے میں 0۰35 فی صد کمی واقع ہوئی تھی۔جمعہ کو ایک ڈالر کے مقابلے میں لیرا کا 18۰6850پر کاروباربند ہواتھا۔

2021ء میں لیراکی قدر میں 44 فی صد کمی واقع ہوئی تھی اور یہ افراطِ زر میں اضافے کے بعدغیرروایتی شرح تبادلہ کا نتیجہ تھا۔ترکی نے ڈالر کے مقابلے میں لیرا کوگرنے سے بچانے کے لیے ایک اسکیم بھی متعارف کرائی تھی۔

اس اسکیم کی وجہ سے کرنسی پالیسی فیصلوں پر کم رد عمل کا اظہارکرتی ہے جوکرنسی کی قدر میں کمی ، انقرہ کی مارکیٹ میں بالواسطہ غیرملکی زرمبادلہ کی فروخت اورمعیشت میں کریڈٹ کے خلاف لیرا کے ذخائر کی حفاظت کرتی ہے۔

اس سال ایک اورنرمی کے چکرکے باوجود اگست کے بعد سے لیرانسبتاً مستحکم رہا ہے اور85 فی صد کے قریب افراطِ زر کے باوجود پالیسی کی شرح 500 بیس پوائنٹس کم ہوکر9 فی صد ہوگئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں