دنیا کے سب سے بڑے صحرا نے سردی کا لباس پہن لیا

صحرا ’’الربع الخالی‘‘ کا رقبہ تقریبا 6 لاکھ مربع کلومیٹر ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دلکش ماحول اور دلکش مناظر کے ساتھ جنوب مشرقی سعودی عرب میں واقع صحرا ’’الربع الخالی‘‘ نے سردیوں کا لباس پہن لیا ہے۔ شدید سردی میں دنیا کے اس سب سے بڑے صحرا کی دلکشی نے نیا روپ دھار لیا ہے۔

اس عظیم صحرا کی خوبصورتی کو العربیہ ڈاٹ نیٹ کی ٹیم نے تصاویر میں مجسم کردیا ہے۔ یہاں پر ریت کے ٹیلے اور چٹانیں سردیوں میں صحرا میں نیا جمالیاتی منظر پیش کر رہی ہیں۔ صحرا کی جانب سے سڑک بہت سے لوگوں کو چہل قدمی پر مجبور کر رہی ہے۔

موسمیات کے تجزیہ کار اور محقق معاذ الاحمدی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ سردیوں کے موسم میں ’’الربع الخالی‘‘ کا درجہ حرارت معتدل موسم کی خصوصیات لئے ہوتا ہے۔ یہ درجہ حرارت 14 سے 18 ڈگری سیلسیس کے درمیان رہتا ہے۔ موسم سرما میں قطبی دباؤ کے گہرے ہونے کے دوران یہ 10 ڈگری تک پہنچ جاتا ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ’’الربع الخالی‘‘ کا صحرا اکثر تیز بارشوں والا موسم رکھتا ہے۔ اس کا سردیوں کا خوبصورت موسم اس میں چہل قدمی کرنے اور اس میں مکاشیت اور جنگلی سفروں سے لطف اندوز ہونے کی طرف راغب کرتا ہے۔

دنیا کے سب سے بڑے صحرا

یہ بات قابل ذکر ہے کہ صحرا ’’الربع الخالی‘‘کا شمار دنیا کے سب سے بڑے صحراؤں میں ہوتا ہے ۔یہ صحرا تقریباً 6 لاکھ مربع کلومیٹر کے رقبے پر واقع ہے اور طول البلد میں تقریباً ایک ہزار کلومیٹر اور چوڑائی میں تقریباً 500 کلومیٹر تک پھیلا ہوا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں