اتحادی فوج کے سرحدی اضلاع منبہ اور شدا پر بمباری کی تردید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

یمن کی آئینی حکومت کی رٹ بحالی میں معاون عرب ملکوں کی فوج پر مشتمل اتحاد نے باغی حوثی ملیشیا کے ان دعوؤں کی تردید کی ہے جس میں اتحادی فوج پر ’’منبہ‘‘ اور ’’شدا’’ نامی سرحدی اضلاع پر بمباری کا الزام لگایا جا رہا ہے۔ اتحاد کا کہنا ہے کہ مبینہ بمباری میں عام شہریوں کی ہلاکت کی خبریں من گھرٹ اور بے بنیاد ہیں۔

عرب اتحاد کے ترجمان بریگیڈئر ترکی المالکی نے واضح کیا ’’کہ الائنس کی مشترکہ کمان کی پوری کوشش ہے کہ وہ گذشتہ برس طے پانے والے سیز فائر معاہدے کی پاسداری کو یقینی بنائے، یہ معاہدہ گذشتہ برس دو اکتوبر کو ختم ہو گیا تھا۔ حوثی ملیشیاؤں کے بے قابو عناصر کی جانب سے سرحدی علاقوں اور اندرون ملک کی جانے والی آئے روز کی خلاف ورزیوں کے مقابلے میں اتحادی فوج انتہائی ضبط نفس سے کام لے رہا ہے۔

اپنے بیان میں بریگیڈئر ترکی نے مزید کہا کہ اتحادی فوج کی حوثیوں کے زیر نگین علاقوں میں بمباری کی گمراہ کن اطلاعات خود ساختہ اور من گھڑت ہیں۔ ان بے بنیاد خبروں کا مقصد انسانی سمگلنگ، منشیات فروشی جیسے منظم جرائم کے بیخ کنی کے لیے اتحادی فوج کے کامیاب آپریشنز کی خبروں کو دبانا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں