امریکا نے پاسداران انقلاب کے اثاثوں کی نشاندہی پر15 ملین ڈالر انعام کا اعلان کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی محکمہ خارجہ کے "انصاف کے لیے انعامات" پروگرام نے کل منگل کو ایرانی پاسداران انقلاب کے مالیاتی نیٹ ورکس کی معلومات دینے والے کو 15 ملین ڈالر نقد انعام دینے کی پیش کش کی ہے۔

پروگرام نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر کہا ہے کہ "ایران یہ تمام ہتھیار کیسے خرید سکتا ہے اور انہیں یمن بھیج سکتا ہے؟"

بیان میں استفسار کیا گیا ہے کہ اسلحہ کی یہ کھیپ پاسداران انقلاب کی طرف سے حوثیوں کے لیے تھی؟

ماہی گیری کے جہاز پر بندوقیں کہاں سے آئیں؟

10 جنوری کو امریکا کے پانچویں بحری بیڑے نے ایران سے یمن کو ہتھیاروں کی اسمگلنگ کرنے والے ماہی گیری کے جہاز کو روکنے کا اعلان کیا۔

امریکی حکام نے ایک بیان میں کہا کہ انہوں نے ماہی گیری کے لیے استعمال ہونے والے ایک جہاز کو روکا اور اس کی تلاشی لی تو اس پر2,116 اسالٹ رائفلیں پائی گئیں۔ یہ جہاز ایران سے بین الاقوامی پانیوں کو عبور کر کے حوثیوں کی طرف جا رہا تھا۔

جبکہ امریکی بحریہ کے مشرق وسطیٰ میں تعینات پانچویں بحری بیڑے کے ترجمان ٹموتھی ہاکنز کا کہنا تھا کہ انہیں جہاز پر کلاشنکوف رائفلیں کپڑے میں لپٹی ہوئی ملی ہیں۔

ایران نے سمندری راستوں سے حوثی ملیشیا کو بندوقیں، راکٹ سے چلنے والے گرینیڈ، راکٹ لانچر اور دیگر ہتھیاروں کی منتقلی کے باوجود ہمیشہ حوثیوں کو مسلح کرنے سے انکار کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں