سعودی عرب 2027ء میں ایشیاکپ فٹ بال ٹورنا منٹ کی میزبانی کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب نے بحرین میں 33 ویں ایشین فٹ بال کنفیڈریشن (اے ایف سی) کانگریس میں غوروخوض کے بعد ایشیائی کپ 2027 کی میزبانی کی بولی جیت لی ہے۔

سعودی وفدنے چیمپئن شپ کی میزبانی کے ساتھ ساتھ موجودہ اسٹیڈیمزکی تزئین و آرائش اور نئے اسٹیڈیمز کی تعمیرکے منصوبوں کا انکشاف کیا تھا۔اس کے بعد سعودی عرب کی جانب سے چیمپئن شپ کی میزبانی کی بولی اور اس کی تفصیل پیش کی گئی تھی۔

اجلاس میں سعودی عرب کے وزیرکھیل شہزادہ عبدالعزیز بن ترکی الفیصل اور فیفا کے صدر جیانی انفنٹینو نے بھی شرکت کی۔

شہزادہ عبدالعزیزنے اعلان کے بعد کہا کہ ’’ہم 2027ء میں سعودی عرب میں پورے ایشیا کو خوش آمدید کہتے ہیں۔ ہم کھیلوں کے سب سے بڑے عالمی مقابلوں کی میزبانی میں بڑی پیش رفت کر رہے ہیں‘‘۔ انھوں نے شرکاء کوبتایاکہ مملکت اس ایونٹ کے لیے تیارہے۔

واضح رہے کہ اکتوبر 2022 میں اے ایف سی کی ایگزیکٹو کمیٹی نے آل انڈیا فٹ بال فیڈریشن (اے آئی ایف ایف) اور سعودی عرب فٹ بال فیڈریشن (ایس اے ایف ایف) کو ایشیا کپ 2027 کی میزبانی کے لیے حتمی بولی دہندگان کے طور پر شارٹ لسٹ کیا تھا۔

تاہم اے ایف سی کی ویب سائٹ کے مطابق، اے آئی ایف ایف نے دسمبر میں اے ایف سی کو میزبان کے انتخاب کے عمل سے بولی واپس لینے کے اپنے فیصلے سے آگاہ کردیا تھا۔

اس دوڑ سے بھارت کی دستبرداری کے بعد سعودی عرب ایشیا کپ کی میزبانی کے لیے واحد بولی دہندہ رہ گیا تھا۔

سعودی عرب نے 2020 میں’’فارورڈ فارایشیا‘‘کے نعرے کے تحت اپنی باضابطہ بولی بک اے ایف سی کو پیش کی تھی۔ سعودی عرب کی جانب سے یہ بولی ایک ایسے وقت میں سامنے آئی تھی جب عام طور پر کھیلوں کے منظرنامے اور خاص طور پر فٹ بال کے منظرنامے کو مملکت کی جانب سے سرکاری سطح پر اجاگرکیا گیا تھا۔

حال ہی میں ، مملکت نے بارسلونا، ریال میڈرڈ اور اے سی میلان جیسی عالمی ٹیموں کے مابین میچوں کی میزبانی کی ہے۔پرتگال کے فٹ بالر کرسٹیانو رونالڈوالنصر کلب کی جانب سے کھیلنے کے معاہدے کے تحت الریاض منتقل ہو گئے ہیں جس سے اس حوالے سے مملکت کی پوزیشن مزید مستحکم ہو گئی ہے۔

سعودی عرب کی قومی ٹیم نے قطرمیں نومبر میں منعقدہ فٹ بال عالمی کپ میں بھی اپنی کارکردگی سے بڑا مثبت اثر ڈالا تھا اور اس نے اپنے پول میچ میں بعد میں عالمی کپ کی فاتح بننے والی ارجنٹائن کی ٹیم کو ہرادیا تھا۔

واضح رہے کہ قطر مشرق اوسط میں پہلی بار فیفا ورلڈکپ 2022ء کی میزبانی کے بعد 2023ء میں اے ایف سی ایشیاکپ کی میزبانی بھی کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں