سیاہ فام اینٹونی لو کا چاقو حملہ روکنے کے لیے فائرنگ کی: امریکی پولیس کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

امریکہ میں سکیورٹی فورسز کی جانب سے ٹانگوں سے محروم سیاہ فام کی ہلاکت کے بعد تناز عہ بڑھ گیا ہے۔ سکیورٹی فورسز نے سیاہ فام کو قتل کرنے کی وضاحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس اہلکاروں نے چاقو سے حملے کو روکنے کے لیے مداخلت کرتے ہوئے اسے قتل کیا تھا۔ دوسری جانب کیلیفورنیا میں افریقی نژاد کی ہلاکت کو پولیس کی جانب سے طاقت کے ضرورت سے زیادہ استعمال کا نتیجہ قرار دیا جا رہا ہے۔

اینٹونی لو کی گرفتاری کی کوشش کی مختلف ویڈیوز نے بدھ کو تنازعہ کھڑا کردیا ہے ۔ راہگیروں کی طرف سے لی گئی تصاویر میں دکھایا گیا ہے کہ 36 سالہ نوجوان اپنی وہیل چیئر چھوڑ کر اپنی ٹانگوں کے بچ جانے والے حصے پر بھاگنے کی کوشش کر رہا تھا جب کہ متعدد پولیس اہلکاروں نے اس کی جانب اپنی ہتھیار تان رکھے تھے۔

فوٹیج میں واضح طور پر یہ نہیں بتایا گیا کہ آگے کیا ہوا تاہم یہ ثابت ہوا کہ پولیس افسران نے اینٹونی لو کو گولی مار کر موت کے گھاٹ اتار دیا ۔

گرفتاری کی کوشش گزشتہ جمعرات کو کی گئی تھی تاہم یہ ویڈیوز حال ہی میں اس تنازعہ کے درمیان سامنے آئیں جب ایک اور سیاہ فام شخص ٹائری نکولس کو جنوبی ریاست ہائے متحدہ میں جنوری کے اوائل میں میمفس پولیس نے بری طرح پیٹا تھا۔ 29 سالہ نکولس اس واقعے کے تین دن بعد 10 جنوری کو انتقال کر گئے تھے اور اس معاملے میں پانچ پولیس افسران کو برطرف کر کے ان پر قتل کا الزام عائد کیا گیا تھا۔

پولیس کا بیان

ہنٹنگٹن پارک پولیس کے مطابق لاس اینجلس کے مضافاتی علاقے میں واقع ایک چھوٹے سے شہر میں ان کے افسران نے وہیل چیئر پر بیٹھے ایک شخص کی طرف سے چاقو کے حملے کے دوران مداخلت کی تھی۔

پولیس کے بیان میں مزید کہا گیا کہ مشتبہ شخص کے پاس 30 سینٹی میٹر طویل چاقو تھا۔ اس نے چاقو پھینک دینے کے پولیس کے احکامات کو نظر انداز کردیا تھا۔ پولیس نے وضاحت کی کہ افسروں نے دو مرتبہ سٹین گن کا استعمال کیا اور اسے قابو میں نہ کر سکے۔مشتبہ شخص قصائی کے چاقو سے افسران کو دھمکیاں دیتا رہا، جس کی وجہ سے اسے ایک پولیس اہلکار نے اسے گولی مار دی۔ پولیس نے یہ نہیں بتایا کہ اس موقع پر کتنے اہلکاروں نے فائرنگ کی تھی۔

دستیاب ویڈیو کلپس میں دکھایا گیا ہے کہ اینٹونی لو نے ایک چاقو سے ملتی جلتی کوئی چیز پکڑی ہوئی ہے۔

تصویروں میں وہ پولیس کی طرف جانے کے بجائے ان سے دور ہوتے دکھائی دے رہا ہے ۔ تحقیقات کے انچارج لاس اینجلس پولیس ڈیپارٹمنٹ کے مطابق دو اہلکاروں نے اینٹونی لو پر تقریباً 10 مرتبہ فائرنگ کی۔ گولی سیاہ فام کے سینے میں لگی اور وہ موقع پر ہی دم توڑ گیا۔

اینٹونی لو کے اہل خانہ نے پیر کو ایک پریس کانفرنس میں وضاحت کی تھی کہ وہ ذہنی عارضے میں مبتلا تھا۔ اور اس کے رشتہ داروں نے ان الزامات کا کوئی جواب نہیں دیا کہ اس نے کسی دوسرے شخص کو چھرا گھونپا تھا۔

اس کی ماں ڈوروتھی لو نے کہا کہ انہوں نے میرے بیٹے کو مار ڈالا۔ انہوں نے اسے اس وقت مارا جب وہ بغیر ٹانگوں کے وہیل چیئر پر تھا۔ لہذا لوگوں کو کچھ کرنا ہوگا۔ میں اپنے بیٹے کے لیے انصاف چاہتی ہوں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں