ترکیہ میں اماراتی امدادی ٹیم نے ملبے تلے دبے شامی خاندان کو بچا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات کی امدادی ٹیموں نے ترکیہ میں تباہ کن زلزلے کے بعد آج ملبے تلے پھنسے چار افراد پر مشتمل شامی خاندان کو زندہ نکال لیا ہے۔ پیر کے روز آنے والے زلزلے میں ہلاکتوں کی تعداد 15000 سے تجاوز کر چکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ، متحدہ عرب امارات کے 'گیلنٹ نائٹ/2' آپریشن کے تحت "قہرمان مرعش" صوبے میں پانچ گھنٹے کی تلاش اور امدادی کارروائی کے بعد ماں، بیٹے اور دو بیٹیوں پر مشتمل ایک شامی خاندان کو ان کے گھر کے ملبے سے زندہ نکال لیا گیا۔

اماراتی طبی ماہرین نے خاندان کو ہسپتال لے جانے سے پہلے فوری مدد فراہم کی۔

ترکی کی ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایجنسی نے جمعرات کو بتایا کہ ترکی اور شام میں آنے والے تباہ کن زلزلے سے متاثرہ علاقے میں منہدم مکانات کے ملبے سے مزید لاشیں نکالی گئی ہیں جس کے بعد مرنے والوں کی تعداد 15,000 سے زیادہ ہو گئی ہے۔

ایجنسی کے مطابق پیر کی صبح آنے والے زلزلے اور آفٹر شاکس کے سلسلے کے بعد ترکی میں 12,391 افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق ہوئی ہے اور جنوب مشرقی ترکی میں ہزاروں عمارتیں گر گئی ہیں۔سرحد کی دوسری جانب شام میں 2,902 افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاع ہے۔

امدادی کارکن تباہ شدہ عمارتوں میں دبے لوگوں کو نکالنے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن زلزلے کے تین دن بعد اور شدید سردی سے امدادی کاموں میں رکاوٹ کے باعث اب امید ختم ہونے لگی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں