ترکیہ زلزلہ

ترکیہ میں زلزلہ:سعودی عرب کی امدادی اورطبّی ٹیموں کی متاثرہ علاقوں میں آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی ہدایت پر مملکت کی امدادی اورطِبّی ٹیمیں جمعرات کو ترکیہ کے شہرعدنہ پہنچ گئی ہیں۔

شاہ سلمان اور ولی عہد نے ترکیہ میں زلزلے سے متاثرین کی امداد کے لیے فضائی پل بنانے کی ہدایت کی ہے۔اس کے تحت جمعرات کو سعودی عرب سے دوسرا طیارہ 98 ٹن امدادی سامان لے کرعدنہ کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پراترا ہے۔اس امدادی سامان میں خوراک، خیمے،ادویہ اور طبی اشیاءشامل تھیں۔

سعودی عرب کے شاہ سلمان انسانی امداد اور ریلیف مرکز(کے ایس ریلیف) نے شام اور ترکیہ میں مہلک زلزلے سے متاثرہ افراد کی مدد کے لیے بدھ کواپنے امدادی پروگرام پرعمل درآمد کا باضابطہ آغازکیاتھا۔

سعودی عرب زلزلہ زدگان کی امداد کے لیے اپنے "ساہم" پروگرام کے ذریعے عطیات بھی وصول کر رہا ہے اور بدھ تک ایک کروڑ65 لاکھ ڈالر(62 ملین سعودی ریال) وصول کیے جاچکے تھے۔

دریں اثناء دونوں ممالک میں قدرتی آفت کے نتیجے میں مرنے والوں کی تعداد سترہ ہزار سے تجاوز کرگئی ہے۔

گذشتہ سوموار کوعلی الصباح 7۰8 کی شدت کے زلزلے کے چند گھنٹے بعد ترکیہ اور شمالی شام میں ایک اور شدید زلزلہ آیا تھا جس کے نتیجے میں اسپتالوں،اسکولوں اور اپارٹمنٹ بلاکس سمیت ہزاروں عمارتیں منہدم ہوگئی تھیں، ہزاروں افراد زخمی ہو گئے اوربے شمارافراد بے گھر ہوگئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں