ترکیہ زلزلہ

ترکیہ:آسٹروی فوج کی سکیورٹی کی ابترصورت حال‘کے پیش نظرامدادی سرگرمیاں معطل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

آسٹریا کی فوج نے ترکیہ کے زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں سکیورٹی کی بگڑتی ہوئی صورت حال کے پیش نظرہفتے کے روزامدادی کارروائیاں معطل کردی ہیں۔

آسٹروی فوج کے ایک ترجمان نے اس فیصلہ کی تفصیل بتائے بغیر کہا کہ ’’متاثرہ علاقوں میں مختلف گروہوں کے درمیان جھڑپیں ہوئی ہیں‘‘۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ آسٹریا کی فورسزکے ڈیزاسٹر ریلیف یونٹ کے 82 فوجی جنوبی صوبہ حاتائی میں دیگربین الاقوامی تنظیموں کے ساتھ ایک بیس کیمپ میں پناہ لیے ہوئے ہیں اوروہ مزید ہدایات کے منتظرہیں۔

آسٹروی فوج کی امدادی ٹیم گذشتہ منگل کو45 ٹن سامان وآلات کے ساتھ زلزلے سے متاثرہ صوبہ حاتائی میں پہنچی تھی اوراس نے ابتدائی کارروائی میں ملبے تلے دبے نو لوگوں کو بچالیا تھا۔ترجمان نے کہا کہ ٹیم نے جمعرات کو آسٹریا لوٹ جانا تھا لیکن اس کی واپسی کا ابھی جائزہ لیا جا رہا ہے۔

ترکیہ اور ہمسایہ ملک شام میں گذشتہ سوموار کوعلی الصباح 7.8 کی شدت کے زلزلے کے نتیجے میں 24 ہزار سے زیادہ اموات ہوچکی ہیں،ہزاروں افراد زخمی ہیں اور لاکھوں بے گھر ہوگئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں