ترکیہ اور شام میں زلزلے سے 26 ملین متاثر:عالمی ادارہ صحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عالمی ادارہ صحت نے ہفتے کے روز اعلان کیا ہے کہ ترکیہ اور شام میں اس ہفتے آنے والے تباہ کن زلزلے سے متاثر ہونے والوں کی تعداد تقریباً 26 ملین تک پہنچ گئی ہے۔ عالمی ادارہ صحت نے خبردار کیا ہے کہ درجنوں ہسپتالوں کو نقصان پہنچا ہے۔

زلزلے سے مرنے والوں کی تعداد 25,000 سے تجاوز کرنے کے ساتھ، اقوام متحدہ کے عالمی ادارہ صحت (WHO) نے ہفتے کے روز فوری اور اہم صحت کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے 42.8 ملین ڈالر جمع کرنے کی فوری اپیل کی۔

تنظیم پہلے ہی اپنے ہنگامی فنڈ سے 16 ملین ڈالر جاری کر چکی ہے۔ عالمی ادارہ صحت نے بتایا تھا کہ زلزلے سے متاثر ہونے والوں کی تعداد تقریباً 23 ملین ہے۔ تاہم یہ تعداد ہفتے کے روز بڑھ کر 26 ملین تک پہنچ گئی۔ترکیہ میں متاثرین کی تعداد 15 ملین اور شام میں 11 ملین تک پہنچنے کا اندیشہ ہے۔

زخمی ہونے والے 50 لاکھ سے زیادہ لوگ شدید زخمی ہیں۔ ان میں تقریباً 350,000 بزرگ اور 1.4 ملین سے زیادہ بچے ہیں۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے اندازوں کے مطابق زلزلے میں 4000 سے زائد عمارتیں منہدم ہوئیں اور تقریباً 15 اسپتالوں کو جزوی یا بڑا نقصان پہنچا۔

شام میں جہاں 2011ء میں شروع ہونے والی جنگ کے نتیجے میں صحت کا نظام درہم برہم ہو رہا ہے، ملک کے شمال مغرب میں صحت کی کم از کم 20 سہولیات بشمول چار اسپتالوں کو نقصان پہنچا ہے۔

یہ صورت حال تباہی میں زخمی ہونے والے دسیوں ہزار افراد کو امداد فراہم کرنے میں مشکلات کو بڑھا دیتی ہے۔

ہنگامی محکموں میں زخمیوں کی آمد کے ساتھ عالمی ادارہ صحت نے صحت کی بنیادی خدمات میں شدید تعطل کے بارے میں خبردار کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں