چین میں کوئلے کی کان بیٹھ گئی، چھ کان کن ہلاک، 47 لاپتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شمالی چین میں کوئلے کی کان بیٹھ جانے سے چھ افراد ہلاک جبکہ متعدد لاپتا ہیں۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق بدھ کو اندرونی منگولیا کے علاقے الکسا لیفٹ بینر میں ایک کان میں 180 میٹر اونچی ڈھلوان کے گرنے کے بعد سینکڑوں کارکنوں پر مشتمل ایک ریسکیو آپریشن جاری ہے۔

چین میں سونے کی کان بیٹھ گئی، کان کنوں کو نکالنے کے لیے ریسکیو آپریشن جاری اسی دن ایک اور لینڈ سلائیڈنگ کے بعد ابتدائی طور پر امدادی کاموں میں رکاوٹ پیدا ہوئی۔

چین کے سرکاری چینل سی سی ٹی وی کے مطابق 47 افراد تاحال لاپتہ ہیں جبکہ چھ کو زندہ نکال لیا گیا اور چھ کی لاشیں نکال لی گئیں۔

چین کی وزارت ایمرجنسی مینجمنٹ نے تاکید کی ہے کہ لاپتا اہلکاروں کی تلاش کے لیے ہر ممکن کوشش کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ زندگیاں بچانا اب بھی اولین ترجیح ہے۔

سی سی ٹی وی کی فوٹیج میں ریسکیو ورکرز کو نارنجی رنگ کے لباس اور پیلے ہیلمٹ پہنے ملبہ ہٹاتے دیکھا جا سکتا ہے۔
سرکاری میڈیا نے کہا ہے کہ کان گرنے سے زنجنگ کول مائننگ کمپنی کے زِیرانتظام کان کا ایک ’وسیع علاقہ‘ متاثر ہوا ہے۔ ابھی تک یہ واضح نہیں ہو سکا کہ کان گرنے کی وجہ کیا تھی۔
تاہم چینی پولیس اس حادثے کی تحقیقات کر رہی ہے اور وزارت ایمرجنسی مینجمنٹ نے بھی ’جامع تحقیقات‘ کا مطالبہ کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں