اسکندریہ میں عجیب و غریب حشرات کا کاروں پر حملہ ، مہلک حادثات کا خطرہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شمالی مصر میں اسکندریہ گورنری میں مچھر نما کیڑوں کے بڑے غول کاروں پر حملہ کرتے ہیں، جس سے شہریوں اور ان کاروں کے ڈرائیوروں کے لیے گاڑی چلانا مشکل ہوجاتا ہے اور ٹریفک حادثات کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

کیڑوں کے جھنڈ کاروں کی ونڈشیلڈز اور شیشوں پر حملہ آور ہوتے ہیں کھڑکیوں سے چپک جاتے ہیں۔ جس سے سڑک پر آنے جانے والی گاڑیاں تک دکھائی نہیں دیتیں۔

اسکندریہ یونیورسٹی کی فیکلٹی آف ایگریکلچر میں میڈیکل اینٹولوجی کے پروفیسر ڈاکٹر مصطفیٰ سلیمان نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو ابتایا کہ یہ "چرونومس" نامی حشرات ہیں جو تالابوں اور دلدلوں میں رہتے ہیں اور تیزی سے نشوونما پا کر تعداد بڑھاتے ہیں۔ کچھ علاقوں میں، انہیں خون کے کیڑے کہا جاتا ہے کیونکہ ان کا رنگ خون کے رنگ سے ملتا ہے۔

ان حشرات کے جھنڈ تیزی سے شاہراہوں کی طرف بڑھتے ہیں اور گاڑیوں کی چمکدار روشنیوں کی طرف متوجہ ہوتے ہیں۔

دن کی نسبت یہ شام کو زیادہ متحرک رہتے ہیں۔ جس کے باعث سڑکوں پر ٹریفک کی نقل و حرکت میں دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

حشرات کے جھنڈ جب شاہراہوں پر کھمبوں پر جمع ہوتے تو بعض اوقات سڑکوں پر مکمل اندھیرا چھا جاتا ہے۔ جو مہلک ٹریفک حادثات کا باعث بنتا ہے۔

یہ زیادہ تر ان علاقوں میں نکلتے ہیں جہاں تالاب، دلدل اور گھاس پھوس ہوتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں