سعودی عرب: دومجرموں کے کم سن لڑکوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے اورقتل پرسرقلم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں ہفتے کے روزدومجرموں کے کم سن لڑکوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے اورقتل کے واقعات میں ملوث ہونے کے جرم میں سرقلم کردیے گئے ہیں۔

سعودی وزارت داخلہ کے مطابق ساحلی شہر جدہ میں کم سن لڑکوں کو اغوا کرنے اور اوران سے جنسی زیادتی کے جرم میں ملوّث ایک شخص تہ تیغ کیا گیا ہے۔

سعودی شہری عمر بن عبداللہ بن عبیداللہ البرکاتی کو نابالغ لڑکوں کو لالچ دے کراغوا کرنے،ان کے ساتھ جنسی زیادتی اور انھیں نقصان پہنچانے کے جرم میں قصور وارقراردیاگیا تھا۔

وزارت داخلہ نے ایک بیان میں بتایا ہے کہ فوجداری عدالت نے مجرم کوسزائے موت سنائی تھی اوراس فیصلے کی اپیل کورٹ اور سپریم کورٹ نے بھی توثیق کی تھی۔اس کے بعد عدالتی فیصلے پرعمل درآمد کے لیے ایک شاہی حکم جاری کیا گیا تھا۔

جدہ ہی میں ایک اور سعودی شہری کو قتل سمیت متعدد جرائم میں ملوث مجرم کو تہ تیغ کیا گیا ہے۔وزارت داخلہ کے مطابق محمدبن عبد الرزق بن سعد فیضی کو ڈیوٹی کے دوران میں ایک سکیورٹی افسر کے قتل اور سکیورٹی گشت پر فائرنگ کرنے کا مجرم قراردیا گیا تھا۔

فیضی کوجان بوجھ کر تیل کی ایک تنصیب کوآگ لگانے،حملہ آور ہونے اورسکیورٹی کے ساتھ چھیڑ چھاڑ" کے مقصد سے ہتھیارخریدنے اور رکھنے کا بھی قصوروار پایا گیا تھا۔وزارت نے بتایاہے کہ مجرم فیضی نے دہشت گردحملوں کی حمایت میں تکفیری سوچ اختیارکی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں