سعودی عرب: مشرقی صوبہ میں دہشت گردمجرم کا سرقلم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے مشرقی صوبہ میں ایک شہری کا دہشت گردی کے جرم میں سرقلم کردیا گیا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق ایک فوجداری عدالت نے مجرم حیدر بن ناصرالطحیفہ کو ایک دہشت گرد سیل میں شامل ہونے پر سزائے موت سنائی تھی۔اس سیل نے ملک کو غیر مستحکم کرنے، سکیورٹی فورسزکے اہلکاروں کو ہلاک اوران پر حملہ کرنے، ان کی گاڑیوں پر مولوتوف کاک ٹیل ب، پھینکنے اور سرکاری املاک کو تباہ کرنے کی کارروائیاں کی تھیں۔

عدالت نے اسے لوگوں کو "دہشت زدہ" کرنے اور سکیورٹی سے چھیڑ چھاڑ کرنے کے لیے عوامی طور پر ہتھیار لے جانے کا بھی قصوروارقرار دیا تھا۔

الطحیفہ کو فوجداری عدالت نے مجرم قرار دیا تھا اور سزائے موت پر عمل درآمد کے لیے شاہی حکم جاری کیا گیا تھا۔اسے منگل کے روز تہ تیغ کیا گیا ہے۔

ایس پی اے کے مطابق وزارت داخلہ نے ایک بیان میں خبردارکیا ہے کہ جو کوئی بھی مجرمانہ دہشت گردی کی کارروائیاں کرے گا،اس کا یہی انجام ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں