افغانستان میں دھماکہ، بلخ کے گورنر داؤد مزمل سمیت 3افراد جاں بحق

دھماکہ گورنر کے ہیڈ کوارٹرز میں دوران اجلاس ہوا، طالبان کے اہم فوجی رہنما داود کے ایرانی پاسداران انقلاب کے ساتھ گہرے تعلقات تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شمالی افغانستان کے صوبہ بلخ کے صدر مقام مزار شریف میں زور دار دھماکہ ہوا۔ دھماکے میں ریاستی گورنر انتظامیہ کے ہیڈکوارٹر کو نشانہ بنایا گیا۔ اس کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوئے۔ مقامی میڈیا نے طالبان کے ہاتھوں صوبہ بلخ کے گورنر داؤد مزمل کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔ ذرائع نے ’’العربیہ‘‘ اور ’’الحدث‘‘ کو بتایا کہ صوبہ بلخ کے گورنر سمیت تین افراد دھماکے میں مارے گئے جو ایک انتظامی اجلاس کے دوران ہوا۔

گورنر داود مزمل کی آخری تصویر
گورنر داود مزمل کی آخری تصویر
Advertisement

داؤد مزمل طالبان میں ایک اہم فوجی رہنما تھے اور ان کے ایرانی پاسداران انقلاب کے ساتھ گہرے تعلقات تھے۔ وہ برسوں پہلے ایک ایرانی سرکاری چینل کے لیے ایک دستاویزی فلم میں نظر آئے تھے۔ اس دستاویز میں امریکیوں کے خلاف اپنی لڑائی کے بارے میں بات کی گئی تھی۔ داوؤ مزمل نائب وزیر داخلہ اور پھر طالبان حکومت کے تحت صوبہ بلخ کے گورنر بن گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں