قدیروف کا گھوڑا ’’زازو‘‘ چوری کر لیا گیا، قیمت 18 ہزار ڈالر تھی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

چیک ریپبلک میں رمضان قدیروف کا گھوڑا چوری کرلیا گیا۔ چیچنیا کے صدر نے انکشاف کیا ہے کہ ان کا گھوڑا زازو 2014 کے بعد مغربی پابندیوں کا پہلا شکار بن گیا ہے ۔ پابندیوں نے انہیں اور ان کے خاندان کو نشانہ بنایا ہے۔ قدیروف نے ٹیلی گرام پر بتایا کہ "2014 کے بعد سے زازو مجھے ، میرے خاندان اور میری ٹیم کو نشانہ بنانے والی مغربی پابندیوں کا پہلا شکار بن گیا ہے۔

رمضان قدیروف نے مزید کہا کہ ان کا گھوڑا کسی نامعلوم گروہ نے چوری کر لیا۔ حیران ہیں کہ ایسا کیسے ہوا اور پولیس کے گشت نے ایسا کیسے ہونے دیا۔ قدیروف نے کہا میں اتفاقات پر یقین نہیں رکھتا لیکن میں کہہ سکتا ہوں کہ زازو کو چرانے والے اتنے احمق ہیں کہ انہوں نے ایک منظور شدہ گھوڑا چرانے کا بھی سوچا۔ ’’ رشیا ٹوڈے‘‘ کی ویب سائٹ پر موجود رپورٹ کے مطابق انہوں نے مزید کہا کہ چور اس حد تک چالاک ہیں کہ پولیس نے انہیں ان کے معاملات کا پتہ لگانے کے قابل نہیں بنایا۔قدیروف نے خدشہ ظاہر کیا کہ گھوڑا ’’ زاز و ‘‘ غلط ہاتھوں میں چلا جائے گا اور اسے نقصان اٹھانا پڑے گا۔

قدیروف اپنے گھوڑے پر
قدیروف اپنے گھوڑے پر

واضح رہے چیک میڈیا نے کل منگل کو مغربی چیک کے علاقے لیتومریز کے گاؤں کرب چیتسی کے ایک اصطبل سے چیچن صدر کے گھوڑے کی چوری کا انکشاف کیا تھا ۔ اس گھوڑے کی قیمت 18 ہزار ڈالر بتائی گئی ہے۔چیک پولیس نے بتایا کہ انہیں اطلاع ملی تھی کہ کرب چیتسی گاؤں کے اصطبل میں سے ایک گھوڑا چوری ہو گیا ہے۔ اندازہ ہے کہ چوری ہفتے کی رات ہوئی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں