’’ایران سے تعلقات ریاض کے اچھی ہمسائیگی کے اصولوں پر کاربند رہنے کی تصدیق ہے‘‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے مشیر قومی سلامتی ڈاکٹر موسیٰ بن محمد العیبان نے کہا ہے کہ شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور وزیر اعظم شہزادہ محمد بن سلمان نے صدر شی جن پنگ کی جانب سے سعودی عرب اور ایران کے درمیان اچھے تعلقات کو فروغ دینے کے فراخدلانہ اقدام کا خیر مقدم کیا ہے۔

اس بات کا اظہار انہوں نے بیجنگ میں سعودی عرب اور ایران کے درمیان معاہدے پر دستخط کے دوران اپنی تقریر میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ "یہ سعودی عرب کے اچھی ہمسائیگی کے اصولوں پر عمل پیرا ہونے اور خطے اور دنیا میں سلامتی اور استحکام بڑھانے اور اختلافات کو حل کرنے کے لیے مذاکرات اور سفارت کاری کے اچھے اصولوں کو اپنانے سے جاصل ہوا ہے۔"

ایران کے ساتھ اختلافات کی وجوہات اور ان کس حل کے بارے میں انہوں نے کہا کہ"اس ہفتے کے دوران ہم نے گہرائی سے بات چیت کی، جس کی حمایت تینوں ممالک کے رہنماؤں نے کی، اس دوران ہم نے اختلافات کی وجوہات اور ان سے نمٹنے کے طریقوں کے بارے میں وسیع پیمانے پر جائزہ لیا۔ "

سعودی عرب ایران معاہدے پر دستخط

واس

انہوں نے کہا کہ خطے میں اور بین الاقوامی سطح پر امن و سلامتی کے فروغ کے لیے عدم مداخلت کے اصولوں پر عمل کرنا لازمی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ "ریاستوں کی خودمختاری کے احترام اور ان کے معاملات میں عدم مداخلت کے اصولوں پر زور دینا ریاستوں کے درمیان تعلقات کی ترقی اور ہمارے خطے میں سلامتی اور استحکام کے فروغ کے لیے ایک بنیادی ستون ہے۔ "

انہوں نے 2021-2022 میں دونوں فریقوں کے درمیان مذاکرات کو اس معاہدے کا پیش خیمہ قرار دیتے ہوئے اس کی میزبانی پر عراق اور عمان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ "ہم جمہوریہ عراق اور سلطنت آف عمان دونوں برادر ممالک کی طرف سے مذاکرات کے پچھلے دور میں فراہم کی جانے والی سہولیات کے لیےان کا شکریہ ادا کرتے ہیں اور بہت خوشی کی بات ہے کہ آج ہم اس معاہدے پر پہنچے ہیں، جو کہ ایک نتیجہ خیز ہے۔"

انہوں نے اس سلسلے میں چین کے مسلسل مثبت کردار کی تعریف کی اور شکریہ ادا کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں