خلیجی ملکوں کے رہائشی حرمین شریفین جانے کی درخواست کیسے دیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حج اور عمرہ کے وزیر توفیق الربیعہ نے اعلان کیا ہے کہ خلیج تعاون کونسل کے ملکوں کے تمام باشندے المکہ المکرمہ اور مدینہ منورہ میں عمرہ کرنے اور مسجد نبوی کی زیارت کے لیے الیکٹرانک ویزا حاصل کر سکتے ہیں۔

اتوار کے روز انہوں نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر خلیجی ملکوں کے رہائشیوں کے لیے عمرہ ویزا کی تفصیلات اور درخواست کا لنک پوسٹ بھی کیا اور لکھا کہ ’’کسی مخصوص پیشے کی ضرورت کے بغیر ان سب کو خوش آمدید‘‘۔ الربیعہ کی اشاعت کے مطابق ویزا کے حصول کی سہولت خود رہائشی اور اس کے قریبی رشتہ داروں کے لیے ہے۔

یہ ویزا سعودی عرب میں ایک یا ایک سے زیادہ مرتبہ داخلے، عمرہ کی رسومات ادا کرنے، روضہ رسولﷺ پر حاضری دینے، تاریخی مقامات پر جانے اور سیاحتی سرگرمیوں اور مملکت کے تمام شہروں کا دورہ کرنے کی بھی ضمانت دیتا ہے۔ سعودی وزیر نے بتایا کہ ویزا کی فیس 300 ریال ہے۔ میڈیکل انشورنس فیس اس کے علاوہ ہے۔ رقم پلیٹ فارم ’’روح السعودیہ‘‘کے ذریعہ جمع کرائی جائے گی۔

دیگر ضروریات میں یہ بات شامل ہے کہ درخواست دینے والا کم از کم 3 ماہ سے خلیجی ملک میں مقیم ہو اور اس کے پاس 6 ماہ کی درست مدت والا پاسپورٹ ہو۔ اور سعودی وزیر سیاحت احمد الخطیب نے اعلان کیا تھا کہ سعودی عرب خلیج تعاون کونسل کے ممالک کے باشندوں کو سیاحتی ویزے دینے کے لیے مخصوص پیشوں کی شرط کو منسوخ کر دے گا۔

سعودی وزیر سیاحت نے کہا کہ ہم خلیجی ملکوں کے تمام باشندوں کو واضح اور سادہ اقدامات کے ساتھ خوش آمدید کہتے ہیں۔ سعودی عرب جانے کے لیے مخصوص پیشوں کی ضرورت کے بغیر ویزا حاصل کرنا آسان ہو گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں