پبلک انویسٹمنٹ فنڈ

سعودی عرب کا الریاض ایئرکے نام سے نئی قومی فضائی کمپنی کے قیام کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے الریاض ایئر کے نام سے ایک نئی قومی فضائی کمپنی کے قیام کا اعلان کیا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق اس نئی فضائی کمپنی کے سربراہ اتحاد ایئر کے سابق چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) ٹونی ڈگلس ہوں گے۔ اس فضائی کمپنی کے قیام کا مقصد مملکت کے تین براعظموں ایشیا، یورپ اور افریقا کے درمیان سفری روابط کو بہتر بنانا ہے۔

سعودی عرب کے پبلک انویسٹمنٹ فنڈ (پی آئی ایف) نے اتوار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ نئی ایئر لائن سے تیل پر انحصار کم کرنے کی پالیسی کے تحت سعودی جی ڈی پی میں 20 ارب ڈالر کا اضافہ متوقع ہے اور اس سے دو لاکھ سے زیادہ براہ راست اور بالواسطہ ملازمتیں پیدا ہوں گی۔

الریاض ایئر کے صدر دفاتر سعودی دارالحکومت میں ہوں گے اور یہ مکمل طور پر پی آئی ایف کی ملکیت ہو گی۔ یہ نئی کمپنی 2030 تک دنیا بھر میں 100 سے زیادہ مقامات کے درمیان اپنی پروازیں چلائے گی۔

پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کے گورنر یاسر بن عثمان الرمیان کمپنی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے سربراہ ہوں گے۔اس کی سینیر مینجمنٹ میں سعودی اور بین الاقوامی ملازمین دونوں شامل ہوں گے۔

ایس پی اے کے مطابق ریاض ایئر ایک عالمی معیار کی ایئر لائن ہو گی جو جدید ترین جدید ٹیکنالوجی سے لیس طیاروں کے اپنے جدید بیڑے میں پائیداری اور حفاظتی معیارات کو اپنائے گی۔

بیان کے مطابق پی آئی ایف کے ذیلی ادارے کے طور پر نئی قومی ایئر لائن پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کی سرمایہ کاری میں مہارت اور مالی صلاحیتوں سے مستفید ہونے کے لیے تیار ہے جب کہ کمپنی کے آپریشنز کی توسیع سے یہ ایک اہم قومی ایئر لائن بن جائے گی۔‘

’نئی قومی ایئر لائن حال ہی میں اعلان کردہ کنگ سلمان انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے ماسٹر پلان کے ساتھ اس شعبے میں پی آئی ایف کی تازہ ترین سرمایہ کاری کی نمائندگی کرتی ہے۔‘ ’ایئر لائن دنیا بھر کے سیاحوں کو سعودی عرب کے ثقافتی اور قدرتی مقامات کی سیر کا موقع فراہم کرے گی۔‘

ریاض ایئر سعودی قومی نقل وحمل اور لاجسٹکس حکمت عملی اور قومی سیاحت کی حکمت عملی کے لیے بھی ہوائی نقل وحمل، کارگو کی صلاحیت اور اس کے نتیجے میں بین الاقوامی مسافروں کی آمد ورفت میں اضافے کے لیے مفید ثابت ہو گی۔

ریاض ایئر کا قیام پی آئی ایف کی حکمت عملی کا حصہ ہے تاکہ امید افزا شعبوں کی صلاحیتوں سے فائدہ اٹھایا جا سکے جو مقامی معیشت کو آگے بڑھانے میں مددگار ثابت ہو سکتی ہے۔

یہ ولی عہد کے وژن 2030 کے مطابق ہوا بازی کی صنعت کی عالمی مسابقت کے قابل بنانے میں مدد دے گا۔

نئی فضائی کمپنی کے قیام کا اعلان نومبر 2022 میں الریاض میں شاہ سلمان بین الاقوامی ہوائی اڈے کے نام سے ایک نئے اور بڑے ایئر پورٹ کے ماسٹر پلان کی نقاب کشائی کے بعد کیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں