بحیرہ اسود پر روسی طیارے کے ٹکرانے سے امریکی ڈرون تباہ، امریکا کا سخت احتجاج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

بحر اسود پر پرواز کے دوران امریکی ڈرون سے روسی جنگی طیارہ ٹکرانے کے نتیجے میں ڈرون مکمل طور پر تباہ ہو گیا۔

امریکی فوج کا کہنا ہے کہ Su-27 روسی جنگی طیارے کی مداخلت پر امریکی ڈرون MQ-9 بحیرہ اسود میں گر کر تباہ ہو گیا ہے۔

امریکی فوجی حکام کے مطابق امریکی ڈرون بین الاقوامی فضائی حدود میں معمول کی کارروائی پر تھا جب روسی جنگی طیارے نے امریکی MQ-9 ریپر ڈرون کو روکنے کی کوشش کی تھی۔

امریکی ڈرون
امریکی ڈرون

حکام کے مطابق امریکی ڈرون کو روکنے کی کوشش میں روسی طیارہ ڈرون سے ٹکرا گیا، ٹکر کے نتیجے میں امریکی ڈرون مکمل طور پر تباہ ہو گیا۔

امریکی فوجی حکام نے روسی طیاروں کے اس عمل کو ’’غیر محفوظ‘‘ اور ’’غیر پیشہ ورانہ‘‘ کارروائی قرار دیتے ہوئے کہا کہ روسی طیارے نے متعدد بار امریکی ڈرون کے قریب سے گزر کر اس پر تیل گرانے کی کوشش بھی کی تھی جو کہ ماحولیاتی اور پیشہ ور اخلاقیات کے منافی عمل تھا۔

امریکی فوجی حکام کا کہنا تھا کہ واقعے کے باوجود امریکا اور اس کے اتحادی علاقے میں اپنا آپریشن جاری رکھیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں