سکرین پر ماں کی تصویر دیکھ کر مصری صحافی کیسے رو پڑے

باون سال کے اللیثی براڈ کاسٹر اور صحافی یونیسکو ایوارڈ برائے انسانی ترقی بھی جیت چکے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ٹی وی ڈائریکٹر نبیل عبدالنعیم نے پروگرام میں بات شروع کی اور کہا ’’میں آپ کے ساتھ ایک چھوٹا سا تجربہ کرنا چاہتا ہوں، میں نہیں جانتا کہ آپ کی رائے کیا ہے، اور کیا آپ مجھے ایسا کرنے کی اجازت دیں گے؟‘‘ اس موقع پر مہمان نے ’’ اوہ‘‘ سے جواب دیا۔ عبد النعیم نے اپنی بات جاری رکھی اور کہا ’’ آج ہماری قسط کا سٹار سویز کی ایک عظیم خاتون ہیں، انہوں نے ہمیں اپنے دو بیٹے عمرو اور شریف دئیے ہیں ۔ کیا یہ خاتون اب مصر کے ہر گھر میں موجود ہیں؟ کیونکہ یہی خاتون تھیں جن کے باعث تعلیم کے پروگرام ٹی وی پر تعلیم کی طرف منتقل ہوگئے ۔ اس عظیم خاتون کو لیلیٰ الدیدی کہا جاتا ہے۔ آج ان کے متعلق ہم سے جو شخصیت بات کریں گی وہ ان کا بڑا بیٹا عمرو اللیثی ہے۔ عمرو اللیثی آ پ آج محترمہ لیلی الدیدی کی نمائندگی کر رہے ہیں۔

اس موقع پر ڈاکٹر عمرو اللیثی خاموش ہوگئے اور سکرین پر اپنے سامنے نظر آنے والی اپنی ماں کی تصویر غور سے دیکھنے لگے۔ اچانک ان کی آنکھوں سے آنسو جاری ہوگئے اور وہ رونے لگے ۔ کچھ لمحات رونے کے بعد انہوں نے عبد النعیم نے کہا "یہ ایک سازش ہے۔ آپ کی طرف سے اور ہدایت کار کی طرف سے" عبدالنعیم نے جواب دیا: "خدا کی قسم، کبھی نہیں " ۔ یہ پروگرام ’’ الحیاۃ‘‘ چینل پر ہر ہفتے اتوار اور پیر کی رات 10 بجے پیش کیا جاتا ہے۔

عمرو اللیثی نے اپنی ماں کے بارے میں صرف دو منٹ تک بات کی اور کہا: "میری ماں ایک عظیم خاتون ہیں، ایک عظیم عورت، سویز میں پیدا ہوئی، انہوں نے میرے والد سے شادی کی، میرے والد ایک پولیس افسر تھے۔ ان کے دو بیٹے تھے۔ انہوں نے اپنے جوان بیٹے کو کھو دیا۔ وہ ان کے ہاتھوں میں فوت ہوا۔ میرے والد کے وفات کے بعد ماں میر ے لیے باپ اور ماں دونوں بن گئی۔ وہ اب میرے ساتھ ہی رہ رہی ہیں۔ اللہ انہیں اچھی صحت دیں۔‘‘ عمرو اللیثی نے ہر اس شخص کو پیغام دیا جن کی مائیں موجود نہیں کہ وہ اپنی ماؤں کے لیے دعا کیا کریں۔

باون سال کے عمرو اللیثی ایک میڈیا شخصیت اور صحافی ہیں۔ وہ ہفتہ وار اخبار ’’الخمیس‘‘کے چیئرمین اور ایڈیٹر انچیف ہیں۔ وہ مصر یونیورسٹی برائے سائنس و ٹیکنالوجی برائے ماحولیات اور کمیونٹی سروس کے نائب صدر اور ڈائریکٹر ہیں۔ اسلامک براڈکاسٹنگ یونین کے سربراہ رہے۔ انٹرنیٹ پر عمر و اللیثی کے متعلق دستیاب معلومات کے مطابق انہوں نے انسانی ترقی میں یونیسکو کا ایوارڈ بھی جیت رکھا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں