امریکی ٹی وی اسٹار پیرس ہلٹن کا ڈونلڈ ٹرمپ کو دھوکہ دینے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

امریکی رئیلٹی ٹی وی سٹار پیرس ہلٹن نے انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے سنہ 2016ء کے صدارتی انتخابات میں سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو ووٹ دینے کا "ڈھونگ" رچایا تھا لیکن درحقیقت انہیں ووٹ نہیں دیا تھا۔

اخبار"دی ہل" کےمطابق ہلٹن نے کہا کہ "جب ایک حیرت انگیز انٹرویو میں مجھ سے پوچھا گیا کہ میں نے الیکشن میں کس کو ووٹ دیا؟ تو میں نے بہانہ کیا کہ میں نے ڈونلڈ ٹرمپ کو ووٹ دیا کیونکہ وہ خاندان کے پرانے دوست تھے اور وہ پہلی ماڈلنگ ایجنسی کے مالک تھے جس کے ساتھ میں نے کام کے لیے دستخط کیے تھے، لیکن جب میں ایک اور ماڈلنگ ایجنسی کے پاس گئی تو وہ غصے میں آ گئے اور اس طرح چیخنا شروع کر دیا جس سے مجھے واقعی ڈر لگتا ہے۔"

ہلٹن نے اپنی کتاب میں جس انٹرویو کا حوالہ دیا ہے وہ 2016 کے وائٹ ہاؤس کی صدارتی دوڑ کے کچھ دن بعد ایک آسٹریلوی ٹیلی ویژن اسٹیشن کو دیا تھا۔ اس موقع پر میں نے اس سوال کا جواب دیا کہ آیا میں نے ٹرمپ کو ووٹ دیا تھا۔ میں نے کہا کہ میں چھوٹی عمر سے ٹرمپ کو جانتی ہوں۔ میں نے ’ہاں‘ میں جواب دیا۔

42 سالہ کاروباری شخصیت پیرس ہلٹن کی کتاب "پیرس: دی میموئیر" کل منگل کو منظرعام پرآئی۔ اس کتاب میں انہوں نے اپنی زندگی کے بعض ایسے واقعات کا بھی ذکر کیا ہے جن پر وہ ’فخر‘ نہیں کرسکتیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے کتاب میں اپنی جوانی کے دور میں کی گئی بعض غلطیوں کا ذکر کیا ہے۔

اپنی یادداشتوں میں انہوں نے اشارہ کیا کہ ٹرمپ کو ووٹ دینے کے بجائے وہ 2016 کے انتخابات میں جو کچھ ہوا اس سے زیادہ شرم محسوس کر رہی ہیں۔ سچ تو یہ ہے کہ میں نے بالکل بھی ووٹ نہیں دیا" انہوں نے مزید لکھا: " کیا میں دوبارہ وہی انتخاب کروں گی؟ بالکل نہیں۔"

انہوں نے مزید کہا کہ "اگر آپ کر سکتے ہیں تو آپ اسے درست کرتے ہیں۔ جہاں ضروری ہو وہاں آپ چپکے سے معافی مانگ سکتے ہیں اور کھلے عام معافی مانگنا بہتر ہو تو وہ بھی ممکن ہے "۔

امریکی سٹار نے اپنی نوعمری کی عصمت دری کے بارے میں حیران کن اور ہولناک تفصیلات کا انکشاف کیا جب وہ 15 سال کی تھیں۔ انہوں نے لکھا ہے کہ "ریپ سے پہلے اسے نشہ آور چیز دی گئی تھی۔"

پیپلزمیگزین کی گذشتہ ماہ شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق ہلٹن نے بتایا تھا کہ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب وہ اور اس کے دوست لاس اینجلس کے ایک مشہور شاپنگ مال میں مردوں کے ایک گروپ سے ملے جہاں وہ اور اس کے دوست تقریباً ہر ویک اینڈ پر جاتے تھے۔ اس نے نشاندہی کی کہ یہ لوگ مال کی دکانوں کے ارد گرد گھوم رہے تھے۔ وہ ان کے ساتھ بات چیت کا تبادلہ کر رہے تھے اور اس وقت انہیں اپنا "پیجر" نمبر دیے تھے۔

نوجوان ارب پتی نے ماڈل نے انکشاف کیا کہ ان افراد نے "اسے اور اس کے دوست کو اپنے گھر آنے کے لیے مدعو کیا" جہاں انہوں نے اسے رسبری کا مشروب دیا۔ اس کے بعد مجھے چکر آنے لگے۔ وہ بالکل نہیں جانتی تھی کہ اس میں کیا ہے۔ اس کو اندازہ ہوا کہ اس مشروب میں ایک نشہ ہے۔ جسے ’روفی‘ کہا جاتا ہے۔ اسے نشہ آور مواد کو مجرم منشیات اور عصمت دری کے متاثرین کے لیے استعمال کرتے ہیں۔

ہلٹن نے کہا کہ بے ہوش ہونے کے کئی گھنٹے بعد اسے ہوش آیا ۔ وہ فوری طور پر جان گئی کہ اس کے ساتھ کیا ہوا ہے۔ اس نے یاد کیا کہ کس طرح اس کے ریپسٹ نے اسے چیخنے سے روکنے کے لیے اس کے منہ پر ہاتھ رکھا اور ایسا لگتا تھا کہ "جیسے وہ [ڈراؤنا] خواب دیکھ رہی ہو۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں