چین کی ثالثی میں ایران اورسعودی عرب میں معاہدہ ’اچھی بات‘ ہے:انٹونی بلینکن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی وزیرخارجہ انٹونی بلینکن نے ایران اور سعودی عرب کے درمیان مصالحتی معاہدہ کرانے میں چین کے کردارکی تعریف کی ہے اورکہا ہے کہ اس سے خطے کو فائدہ ہوسکتا ہے۔

انٹونی بلینکن نے ایتھوپیا کے دورے کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا:’’ہمارے نقطہ نظر سے،کوئی بھی چیزجوکشیدگی میں کم لانے، تنازعات سے بچنے اورایران کی طرف سے کسی بھی طرح سے خطرناک اورتخریبی کارروائیوں کو روکنے میں مدد دے سکتی ہے،ایک اچھی بات ہے‘‘۔

ان کاکہناتھا کہ’’میرے خیال میں یہ بات قابل قدرہے کہ ممالک جہاں بھی کرسکتے ہیں،وہاں کارروائی کریں، سلامتی کوآگے بڑھانے اورپُرامن تعلقات کو فروغ دینےکی ذمہ داری لیں‘‘۔

تیل درآمدکرنے والےایک بڑے ملک چین نے گذشتہ ہفتے ایران اورسعودی عرب کے درمیان تعلقات بحال کرنے کامعاہدہ کرایاتھا،جس کی واشنگٹن کے ساتھ دیرینہ شراکت داری صدرجوبائیڈن کی جانب سے انسانی حقوق کے خدشات کی وجہ سے خراب ہوئی ہے۔

امریکااکثردنیامیں چین کے کردارکوعدم استحکام کا باعث قراردیتے ہوئے اس کی مذمت کرتا رہا ہے، حالانکہ اس نے یہ بھی کہا ہے کہ اگربیجنگ ایک بڑی طاقت بننا چاہتا ہے تو اسے بین الاقوامی معاملات میں زیادہ ذمہ دارانہ کردار اداکرنے کی ضرورت ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں