ایران غیر ملکیوں کو گرفتار کرکے عالمی معاہدے کی خلاف ورزی کر رہا : فرانس

پیرس اور تہران کے درمیان تعلقات گزشتہ مہینوں خراب ہیں،تہران نے 7 فرانسیسی شہریوں کو حراست میں لے لیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فرانس نے منگل کے روز ایران پر ملکوں کے درمیان قونصلر تعلقات کی وضاحت کرنے والے بین الاقوامی معاہدے کی خلاف ورزی کا الزام لگایا اور کہا ہے کہ تہران نے عوامی طور پر یہ ظاہر کیا ہے کہ اس نے من مانی طور پر غیر ملکی شہریوں کو حراست میں لیا ہے۔

یاد رہے فرانس اور ایران کے درمیان تعلقات حالیہ مہینوں میں خراب ہوئے ہیں۔ تہران نے 7 فرانسیسی شہریوں کو حراست میں لے لیا ہے جسے پیرس نے یرغمال بنانا قرار دیا ہے۔

ایران سے فرانسیسی شہریوں  کے رہائی کا مطالبہ کرنے کے لیے  پیرس میں ماضی کا ایک احتجاج
ایران سے فرانسیسی شہریوں کے رہائی کا مطالبہ کرنے کے لیے پیرس میں ماضی کا ایک احتجاج

ایران نے ان میں سے ایک ایرانی۔ فرانسیسی اکیڈمک ’’فریبا عادل خواه‘‘ کو رہا کیا ۔ تاہم ابھی یہ واضح نہیں ہوا کہ وہ فرانس واپس آنے سے قبل ایران تک رہیں گے۔ دوسری طرف ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان ناصر الکنعانی نے پیر کو صحافیوں کو بتایا کہ فرانسیسی حکومت ایران کے معاملات میں مداخلت کر رہی ہے اور تہران کے واقعات کے حوالے سے تباہ کن موقف اپنا رہی ہے۔ الکنعانی نے کہا کہ یہ واضح ہے کہ فرانس کی طرف سے اٹھائے گئے یہ مؤقف اور اقدامات قیدیوں سے متعلق مذاکرات میں مدد نہیں کریں گے۔

فرانسیسی وزارت خارجہ کی ترجمان ’’این کلیئر لیجینڈرے‘‘ نے کہا ہے کہ کنعانی کے ریمارکس بہت پریشان کن ہیں اور فرانسیسی شہریوں کی حراست کے دوران کمزور نوعیت کو اجاگر کرتے ہیں۔ یہ ایرانی حکام کی جانب سے قونصلر تعلقات کے ویانا کنونشن کی خلاف ورزی کا اعتراف ہے۔ یہ کنونشن ممالک کے درمیان سفارتی تعلقات کی بنیاد ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں