ترکیہ، شام، ایران، اور روس حکام کی ملاقات ملتوی: ترک ذرائع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکیہ کی وزارت خارجہ کے ایک ذریعے نے جمعرات کو خبر دی کہ روس، ترکیہ، ایران اور شام کے نائب وزرائے خارجہ کا اس ہفتے ہونے والا اجلاس غیر متعینہ تاریخ تک ملتوی کر دیا گیا ہے۔

وزیر خارجہ میولود چاوش اولو نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ چاروں ممالک کے نائب وزرائے خارجہ اس ہفتے ماسکو میں ملاقات کریں گے، اس ملاقات کا مقصد شام کے بحران کو حل کرنا ہے۔

سرکاری اناضول ایجنسی نے پیر کو خبر دی تھی کہ نائب وزرائے خارجہ کا اجلاس 15-16 مارچ کو منعقد ہوگا۔

ترکی کی وزارت خارجہ کے ایک ذریعے نے تفصیل بتائے بغیر کہا کہ ملاقات "تکنیکی وجوہات" کی بنا پر ملتوی کر دی گئی ہے۔

نیٹو کا رکن ترکی شام میں 12 سالہ خانہ جنگی کے دوران شامی صدر بشار الاسد کی سیاسی اور مسلح حزب اختلاف کا ایک بڑا حمایتی رہا ہے۔ تاہم حالیہ دنوں دونوں ممالک کے درمیان ممکنہ ہم آہنگی کی کئی اشارے ملتے ہیں۔

شام اور ترکیہ کے وزرائے دفاع نے دسمبر میں ماسکو میں اپنے روسی ہم منصب کے ہمراہ تاریخی بات چیت کی۔

جنوری میں، ترک وزیر خارجہ نے کہا کہ وہ فروری میں اپنے شامی ہم منصب سے ملاقات کر سکتے ہیں تاکہ دونوں پڑوسیوں کے درمیان تعلقات کی بہتری پر بات چیت کی جا سکے۔

اسد کے اہم اتحادی روس نے بھی ترکیہ کے ساتھ مفاہمت کی حوصلہ افزائی کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں