الوداع کرونا، اس سال وائرس عام فلو کی مانند ہوسکتا: عالمی ادارہ صحت

لگتا ہے اس سال کہ سکیں گے ’’کوویڈ 19 ‘‘ پبلک ہیلتھ ایمرجنسی کے طور پر ختم ہو گیا: مائیکل ریان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

آخر کار 3 سال کی پریشانی کے بعد لگتا ہے کہ کرونا ایک عام فلو جیسے وائرس میں تبدیل ہو گیا ہے۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے اعلان کیا ہے کہ اس سال کوویڈ 19 کا خطرہ اس حد تک کم ہوسکتا ہے کہ یہ موسمی انفلوئنزا کے خطرے کی طرح ہوجائے۔

ڈبلیو ایچ او کے ایمرجنسی ڈائریکٹر مائیکل ریان نے جمعہ کو ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ "مجھے لگتا ہے کہ ہم اس مقام پر پہنچنا شروع کر رہے ہیں جہاں ہم ’’ کوویڈ 19‘‘ کو موسمی فلو کی مانند دیکھ سکیں گے۔ کورونا باقی رہے گا مگر ایک صحت کے خطرے اور زندگیاں نگلنے والے وائرس کے طور پر نہیں بلکہ زندگی میں خلل نہ ڈالنے والے ایک ایسے وائرس کے طور پر معاشرے میں باقی رہے گا۔ مجھے لگتا ہے یہ اس سال ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ دنیا اب وبائی امراض کے دوران پہلے سے کہیں بہتر جگہ پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ اس سال ہم یہ کہہ سکیں گے کہ ’’ کوویڈ 19 ‘‘ بین الاقوامی تشویش پر مبنی پبلک ہیلتھ ایمرجنسی کے طور پر ختم ہو گیا ہے۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے 30 جنوری 2020 کو صحت عامہ کی ایمرجنسی کا اعلان کیا تھا جب چین سے باہر وائرس کے 100 سے کم کیسز اور صفر اموات ریکارڈ کی گئی تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں