مسلح روسی طیاروں نے مارچ میں 25بار شام میں امریکی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی: امریکہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مسلح روسی طیاروں نے مارچ کے آغاز سے اب تک ، شام میں تنف اڈے پر 25 بار امریکی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی ہے، ایک سینئر امریکی جنرل نے بدھ کو بتایا۔

امریکی سینٹرل کمانڈ کے لیے مشترکہ افواج کے فضائی کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل الیکسس گرینکیوچ نے انٹرویو میں کہا کہ روسیوں نے امریکا اور روس کے درمیان برسوں پرانے معاہدے کی خلاف ورزی کی، جس سے کشیدگی میں اضافے کا خطرہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ روسی لڑاکا طیاروں کی جانب سے روکنے کے بعد امریکی ڈرون کی تباہی کے واقعے کی روشنی میں اہم تشویش اس سلسلے میں"غلط اندازہ یا کوئی غیر پیشہ ورانہ یا نادانی پر مبنی اقدام" ہے۔

امریکی اور روسی افواج نے ایک مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط کیے تھے جس میں شام کی فضائی حدود میں حفاظت کا طریقہ کار طے کیا گیا تھا تاکہ دونوں افواج کے جیٹ طیاروں کے درمیان کسی حادثے یا تصادم سے بچا جا سکے۔

"روسیوں نے پچھلے کئی مہینوں میں پروٹوکول کے اس اصول کی خلاف ورزی کی ہے،" گرینکیوچ نے کہا۔

امریکی ایئربیس پر روسی پروازوں کی تعداد کو مدنظر رکھتے ہوئے، امریکی کمانڈر نے کہا کہ فروری میں صفر اور جنوری میں 14 خلاف ورزیاں ہوئیں۔ تاہم مارچ کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ یہ ایک "قابل ذکر اضافہ ہے"۔

"وہ باقاعدگی سے ہماری یونٹوں کے اوپر سے براہ راست پرواز کر رہے ہیں۔۔۔ "لہذا، یہ ایک غیر آرام دہ صورتحال ہے۔"

کمانڈر نے کہا کہ فضائی حدود کی خلاف ورزیاں "غلط حساب کتاب کے خطرے کو بڑھاتی ہیں،" "اور بحیرہ اسود میں امریکی ڈرون ایم کیو 9 کے واقعے کو دیکھتے ہوئے، یہ اس قسم کا رویہ نہیں ہے جس کی میں ایک پیشہ ور فضائیہ سے توقع کروں گا۔"

ایک امریکی فوجی نگران ڈرون ایم کیو 9 مارچ کو روس کے ایس یو 27 لڑاکا طیاروں کے ساتھ بین الاقوامی فضائی حدود میں اس علاقے کے قریب تصادم کے بعد بحیرہ اسود میں گر کر تباہ ہو گیا تھا جو روس کا دعویٰ ہے کہ یوکرین کا حصہ نہیں۔ روس نے اس تصادم کی تردید کی۔

پیر کے روز، روسی وزارت دفاع نے کہا کہ ایک روسی ایس یو 35 لڑاکا طیارے نے بحیرہ بالٹک میں روسی سرحد کی طرف پرواز کرنے والے دو امریکی اسٹریٹجک بمبار طیاروں کو روکنے کے لیے پرواز کی، تاہم واشنگٹن اس واقعے کی تردید کرتا ہے۔

جنرل نے خبردار کیا کہ اگر انہیں زمین پر جاری امریکی فوجی آپریشن کے دوران روسی پرواز کا جواب دینا پڑا تو داعش کے خلاف مشن خطرے میں پڑ سکتا ہے۔

اس سوال کے جواب میں کہ کیا "یہ درحقیقت داعش کے خلاف لڑائی سے خلفشار ہے؟" انہوں نے کہا کہ " ابھی تک زمین پر لڑائی اس سے متاثر نہیں ہوئی، لیکن اس میں یقینی طور پر اس کی صلاحیت موجود ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں