میکرون نے ٹی وی انٹرویو کے دوران ہاتھ چھپا کر اپنی مہنگی گھڑی اتاردی

گھڑی کی قیمت 80 ہزار یورو، وہ ایک اجلاس کے شروع ریٹائرمنٹ کے قانون کے متعلق بات کر رہے تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے اس وقت فرانس میں تنازعہ پیدا کردیا جب انہوں نے ٹی وی انٹرویو کے دوران اپنے ہاتھ چھپاکر اپنی کلائی سے قیمتی گھڑی اتار دی۔ ان سے ’’فرانس ‘‘2 اور ’’TF1‘‘ کے ساتھ ایک براہ راست انٹرویو کیا جارہا تھا۔ انٹرویو میں ان سے اپنے ملک میں متنازعہ ریٹائرمنٹ سسٹم میں اصلاحات اور احتجاج کے بارے میں پوچھا گیا تھا۔

فرانسیسی میڈیا کے مطابق میکرون کی گھڑی کی قیمت 80 ہزار یورو ہے اور وہ میٹنگ کے آغاز میں ریٹائرمنٹ کے قانون پر بات کرتے ہوئے اسے اپنی کلائی سے ہٹانے ہوئے نظر آئے۔

میکرون کے قریبی نے میڈیا کو وضاحت کی کہ سوشل میڈیا پر افواہوں کے برعکس صدر نے اپنی گھڑی کو چھپانے کے لیے نہیں اتاری بلکہ گھڑی اس لیے اتاری کہ انھوں نے اسے میز پر زور سے مارا تھا۔

ایلیسی پیلس کا ردعمل فوری طور پر آیا اور انہوں نے بھی کہا کہ میکرون نے تکنیکی وجوہات کی بناء پر گھڑی اتاری تھی۔ وہ اسے ڈیڑھ سال سے زیادہ عرصے سے باقاعدگی سے پہن رہے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں